The news is by your side.

بھارتی کرکٹرز کی بیٹیوں کیلئے غیر اخلاقی تبصرہ کرنیوالوں کیخلاف کریک ڈاؤن شروع

 بھارتی دارالحکومت نئی دہلی کی پولیس نے کرکٹرز مہیندرا سنگھ دھونی اور ویرات کوہلی کی بیٹیوں اور بیوی کے بارے میں سوشل میڈیا پر غیر اخلاقی ریمارکس کرنے والوں کے خلاف کارروائی شروع کردی ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق دہلی کی خواتین  کمیشن کی صدر سواتی مالیوال نے ویرات کوہلی کی بیٹی وامیکا اور ایم ایس دھونی کی بیٹی زیوا سے متعلق سوشل میڈیا پوسٹس پر نفرت انگیز  کمنٹس کرنے والوں کے خلاف پولیس کو تحریری درخواست جمع کروائی تھی۔

درخواست کے نتیجے میں دہلی پولیس نے مقدمہ درج کیا اور اب اس کے خلاف کارروائی کی جائے گی جس کے بعد نفرت انگیز تبصرے کرنے والوں کو گرفتار کیا جائے گا۔

سواتی مالیوال نے ایف آئی آر درج ہونے کا ٹوئٹر پر بتایا اور ساتھ ہی کوہلی اور دھونی کو بھی مینشن کیا۔

انہوں نے کہا کہ چھوٹی بچیوں کے خلاف اس طرح کے نازیبا الفاظ اور بیانات دینے والے سوشل میڈیا صارفین سلاخوں کے پیچھے ہوں گے۔

محمدشامی کی حمایت: کوہلی کو شیرخوار بیٹی کے ریپ اور قتل کی دھمکی

یاد رہے کہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں بھارت کی پاکستان سے ہار کے بعد ہندو انتہا پسندوں نے شکست کا ذمہ دار بھارتی بولر محمد شامی کو ٹھہراتے ہوئے انہیں غدار قرار دیا۔

اس کے بعد بھارتی کرکٹ بورڈ اور ویرات کوہلی نے محمد شامی کی حمایت میں ٹوئٹس کیں۔

ویرات کی جانب سے شامی کی حمایت کرنے پر ہندو انتہا پسندوں نے کوہلی اور انوشکا شرما کی بیٹی کو نشانہ بنایا اور ریپ کی دھمکیاں دینے لگے۔

دوسری جانب ایم ایس دھونی کو 2020 میں انسٹاگرام صارف نے ان کی بیٹی زیوا کو ریپ کرنے کی دھمکی دی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں