The news is by your side.

Advertisement

کراچی: ڈی ایس پی آفس بڑی تباہی سے بچ گیا، پھینکا گیا ہینڈ گرنیڈ پھٹ نہ سکا

واقعہ اسٹاک ایکس چینج حملے سے مماثلت رکھتا ہے: بم ڈسپوزل اسکواڈ کی رپورٹ

کراچی: شہر قائد کے علاقے گلبہار میں موٹر سائیکل سوار ملزمان ڈی ایس پی کے دفتر پر ہینڈ گرنیڈ پھینک کر فرار ہو گئے، تاہم خوش قسمتی سے بم پھٹ نہ سکا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق کراچی میں ڈی ایس پی گلبہار کے دفتر پر بم حملہ ہوا ہے، پولیس کا کہنا ہے کہ ہینڈ گرنیڈ پورے طریقے سے پھٹ نہ سکا، واقعے کے بعد پولیس کے اعلیٰ حکام ڈی ایس پی کے دفتر پہنچ گئے۔

بم حملے کے بعد بم ڈسپوزل اسکواڈ کو بھی فوری طور پر طلب کیا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ 3 سے 4 موٹر سائیکل سوار ملزمان نے بم پھینکا تھا، حملے کے وقت ڈی ایس پی اور دیگر عملہ دفتر میں موجود تھا، تاہم خوشی قسمتی سے بم پھٹ نہ سکا، اس لیے کوئی نقصان نہ ہوا۔

بم ڈسپوزل اسکواڈ نے ابتدائی رپورٹ بھی تیار کر لی ہے، تفتیشی حکام کا کہنا ہے کہ واقعہ اسٹاک ایکس چینج حملے سے مماثلت رکھتا ہے، اسٹاک ایکس چینج حملے میں ہلاک دہشت گردوں سے ایسے ہی ہینڈ گرنیڈ ملے تھے۔

اسٹاک ایکسچینج حملے کا مقدمہ درج، بی ڈی ایس رپورٹ تیار

تفتیشی حکام نے بتایا ہے کہ ہینڈ گرنیڈ تقریباً 400 گرام سے زائد وزن کا تھا، فیکٹری میں تیار ہینڈ گرنیڈ کا صرف ڈیٹونیٹر ہی پھٹا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں