The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں قائم 47 سالہ پرانے مشہور مارٹن ٹاور کو زمیں بوس کر دیا گیا

ہارسبرگ: امریکی ریاست پنسلوینیا میں قائم 47 سالہ پرانے مشہور مارٹن ٹاور کو زمیں بوس کردیا گیا، عمارت کو زمین بوس کا منظر دیکھنے کے لیے شہریوں کی بڑی تعداد موقع پر جمع رہی۔

تفصیلات کے مطابق امریکا میں اسٹیل مینوفیکچرنگ کمپنی بیت لحم کی جانب سے ارٹن ٹاور کو حال ہی میں انتہائی مہارت کے ساتھ زمین بوس کیا گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کمپنی کی عمارتوں کو زمین بوس کرنے والی تکنیکی ٹیم کے ماہرین نے پنسلوینیا میں واقع عمارت کو بارود سے اڑا یا۔ عمارت کو زمین بوس نے کا منظر دیکھنے کے لیے شہریوں کی بڑی تعداد موقع پرجمع ہوگئی تھی۔

اس موقع پر لوگوں نے عمارت کے زمین بوس ہونے کے مناظر اپنے کیمروں میں محفوظ کرلیے۔ اکیس منزلہ عمارت جس میں 16 ہزار ٹن فولاد شامل تھا چند سیکنڈز کےاندر اندر زمین بوس ہوگئی۔ عمارت گرنے سے گردو غبار اٹھا تاہم جلد ہی وہ بھی بیٹھ گیا۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی فوٹیج میں تاریخی’مارٹن ٹاور’ کو زمین بوس ہوتے دیکھا جا سکتا ہے۔ مارٹن ٹاور کے موجودہ مالکان اسی جگہ پر ایک نئی عمارت کھڑی کرنے کی منصوبہ بندی کررہے ہیں۔ نئی عمارت 101 میٹر بلند ہوگی۔اس کی تعمیر نو پر 20 کروڑ ڈالر کے اخراجات کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔

ان میں اسپیئرپارٹس کی دکانوں، ہوٹلوں، دفاتر کے ساتھ 528 رہائشی فلیٹس بھی تعمیر کیے جائیں گے۔ یہ عمارت امریکی اسٹیل مینو فیکچرنگ کمپنی بیت لحم نے تعمیر کی تھی۔

خیال رہے کہ دوسری عالم جنگ کے موقع پر یہ کمپنی امریکی فوج کو اسلحہ اور بحری جہاز فراہم کرنے میں پیش پیش رہی ہے۔ امریکا میں ایمپائر اسٹیٹ، گولڈن گیٹ پل اور کئی دوسری شہرہ آفاق عمارتیں بیت لحم کی تعمیر کردہ ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں