The news is by your side.

Advertisement

گزشتہ 6 ماہ میں گزشتہ سال کے مقابلے میں جرائم میں 35.16 فیصد کمی آئی

اسلام آباد : وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں  چھ ماہ میں گزشتہ سال کے مقابلے میں جرائم میں 35.16 فیصد کمی ہوئی گزشتہ سال جرائم کے کیسز 1453 تھے جو رواں سال 938 رہ گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزارت داخلہ نےقومی اسمبلی کے اجلاس میں گزشتہ ایک سال کے دوران ہونے والے جرائم کی تفصیلات پیش کردیں، جس کے مطابق وفاقی دارالحکومت میں گزشتہ چھ ماہ میں گزشتہ سال کے مقابلے میں جرائم میں 35.16 فیصد کمی ہوئی گزشتہ سال جرائم کے کیسز 1453 تھے جو رواں سال 938 ر ہے گئے۔

تحریری جواب میں کہا گیا پچھلے سال قتل کے مقدمات 56 تھے جبکہ رواں برس ان کی تعداد 53 ہے زناء اور اغوا کے واقعات 198 سے کم ہوکر 145 رہ گئے جبکہ ڈکیتی اور چوری کے واقعات بھی 323 سے کم ہوکر 183 ہوگئے اورگاڑی چوری کے واقعات 142 سے کم ہوکر 104 تک رہے گئے۔

جرائم کی تفصیلات کے مطابق موٹر سائیکل چوری کی وارداتیں بھی 279 سے کم ہوکر 144 ہوگئے، جرائم کی حوصلہ شکنی کے لیے ناکے، سرچ آپریشن، اچانک چیکنگ اور سیف سٹی کیمراز کے ذریعے مانیٹرنگ کی جاتی ہے۔

دوسری جانب ڈپٹی سپیکر نے رکن اسمبلی علی وزیر کی گرفتاری کے حوالے سے ایوان کوبتایا کہ یبر پختونخوا پولیس نے اسپیکر آفس کو آگاہ کر دیا، علی وزیر کو اقدام قتل،دہشت گردی اور 16 ایم پی او کے تحت گرفتار کیا گیاہے۔

وزارت داخلہ نے ایوان کوبتایاہے کہ غیر ملکیوں کو قومی شناختی کارڈ جاری کرنے پر نادرا سے 120 ملازمین برطرف کئے گئے، جعل سازی پر 9554 قومی شناختی کارڈز منسوخ کئے گئے۔تفصیلات قومی اسمبلی میں پیش کردی ہیں۔

اعجاز شاہ نےتحریری جواب میں ایوان کوبتایا کہ ایک لاکھ اکیس ہزار 117 کارڈز مشکوک ہونے پر بلاک کردیئے گئے ہیں بلوچستان میں بھی 22072 کارڈز مشکوک ہونے پر ضبط کرلیے گئے ضلعی سطح کی کمیٹی کی رپورٹ پر بلوچستان کے 1450 کارڈ منسوخ بھی کردیئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں