The news is by your side.

Advertisement

صوبہ پنجاب میں 6 ماہ کے دوران جرائم میں اضافہ

لاہور: صوبہ پنجاب میں گزشتہ 6 ماہ میں قتل، اغوا، زیادتی اور ڈکیتی کے واقعات میں ہوشربا اضافہ ہوگیا۔ 6 ماہ میں مختلف واقعات کے 2 لاکھ ایک ہزار سے زائد مقدمات درج ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ پنجاب میں 6 ماہ میں 16 سو سے زائد قتل کی وارداتیں رپورٹ ہوئیں، 2 ہزار 35 افراد کو قتل کرنے کی نیت سے زخمی کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق 6 ماہ میں اغوا اور اغوا برائے تاوان کی وارداتوں میں ہوشربا اضافہ دیکھا گیا، اغوا کی 5 ہزار 862 وارداتیں رپورٹ ہوئیں۔ اس عرصے کے دوران زیادتی کے 14 سو 45 اور اجتماعی زیادتی کے 67 واقعات رپورٹ ہوئے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ صوبے میں گاڑی اور موٹر سائیکلیں چوری ہونے اور چھیننے کے 9 ہزار 940 وارداتیں رپورٹ ہوئیں۔ ڈکیتی اور چوری کی 6 ہزار 700 وارداتیں رپورٹ ہوئیں۔

رپورٹ کے مطابق 6 ماہ میں مختلف واقعات کے 2 لاکھ ایک ہزار سے زائد مقدمات درج ہوئے۔

دوسری جانب صوبائی دارالحکومت لاہور میں جرائم میں کمی دیکھی گئی، لاہور میں جرائم کی شرح مزید کم ہونے کی تصدیق عالمی کرائم انڈیکس نے کی، عالمی ڈیٹا بیس نمبیو کی کرنٹ لسٹ میں لاہور 213 ویں نمبر پر آگیا۔

رواں برس جنوری میں لاہور جرائم کی شرح کے لحاظ سے 174 ویں نمبر پر تھا۔ 6 ماہ میں کرائم انڈیکس میں لاہور نے 39 درجے کی بہتری حاصل کی۔ چند دن قبل جاری ہونے والی ششماہی رپورٹ میں کراچی کا 75 واں اور اسلام آباد کا 257 واں نمبر ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں