The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس: ماہرین نے خبردار کردیا

لندن: برطانوی ماہرین نے تمباکو نوشی کرنے والوں کو ایک بار پھر خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’گانجے‘ کا استعمال بھی وبائی مرض ’’کروناوائرس‘‘ کے حملے کا سبب بن سکتا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ماہرین نے متنبہ کیا ہے کہ سگریٹ اور شیشے کے علاوہ ’گانجا’ پینے والوں کو بھی کروناوائرس ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔

برطانوی ادارہ برائے تمباکو کنٹرول کے ڈاکٹر اسٹینٹن کا کہنا ہے کہ سگریٹ اور شیشہ پینے سے نزلہ نہیں ہوتا بلکہ استعمال شدہ تمباکو بیماری کی بڑی وجہ بن سکتا ہے، تمباکو نوشی براہ راست پھیپڑوں کو متاثر کرتی ہے جس کے باعث کروناوائرس بہ آسانی حملہ آور ہوسکتا ہے، البتہ اس حملے سے متعلق کوئی حتمی تحقیق سامنے نہیں آئی۔

کروناوائرس: تمباکو نوشی کرنے والوں کے لیے بری خبر

انہوں نے بتایا کہ سگریٹ اور گانجا نوشی میں کوئی بڑا فرق نہیں ہے، ایسے بہت سے تحقیقاتی مطالعے پڑے ہیں جن میں تمباکو نوشی کو مضر قرار دیا گیا، بعض اوقات مہلک مرض کا بھی سبب بن سکتی ہے۔

برطانیہ کے چیف میڈیکل افسر ڈاکٹر گلانٹز نے خبردار کیا ہے کہ شہری تمباکو نوشی کو ترک کردیں، بصورت دیگر کروناوائرس کے منتقل ہونے کے امکانات بڑھ جائیں گے۔ ایک اور طبی ماہر کا کہنا تھا کہ سگریٹ ودیگر نشہ اگر ابھی چھوڑ دیا جائے تو یہ بہت اچھا موقع ہوگا۔ سگریٹ نوشی کے ساتھ ساتھ آئسولیشن اختیار نہیں کرسکتے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں