The news is by your side.

خوردنی تیل کی طلب پوری کرنے کیلئے حکومت کا بڑا فیصلہ

اسلام آباد : درآمدی بل کم کرنے کے لیے وفاقی حکومت نے تیاریاں شروع کردیں، کسانوں کو مراعات فراہم کی جائیں گی۔

اس حوالے سے ذرائع وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ خوردنی تیل کی مد میں2030تک درآمدی بل 11ارب ڈالرتک پہنچ جائے گا۔ ذرائع کے مطابق خوردنی تیل کی درآمد کم اور مقامی طلب پوری کرنے کیلئے مقامی پیداوار بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

کوکنگ آئل کی طلب پوری کرنے کیلئے سورج مکھی اور کینولا کی کاشت ڈیڑھ لاکھ ایکڑ سے بڑھا کر6 لاکھ ایکڑ کی جائے گی۔ ذرائع وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ خود کفالت کی پالیسی اختیار کرتے ہوئے خوردنی تیل کی درآمد میں کمی کی جائے گی۔

60فیصد خوردنی تیل کی مقامی پیداوار بڑھانے سےسالانہ7ارب ڈالر سے زائد کی بچت ہوگی، رواں مالی سال کے دوران سورج مکھی اور کینولا کی کاشت 6لاکھ ایکڑ پر کی جائے گی۔

اس کے علاوہ کینولا کی کاشت بڑھانے کیلئے شارٹ، میڈیم اور لانگ ٹرم پالیسی بھی بنائی جائے گی، کینولا کی کاشت کرنے والے کسانوں کو  خصوصی مراعات بھی فراہم کی جائیں گی۔

مزید پڑھیں : خوردنی تیل کی مقامی پیداوار میں نمایاں اضافہ

گزشتہ ماہ پاکستان بیورو برائے شماریات کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے دو ماہ میں ملک میں خوردنی تیل کی پیداوارمیں سالانہ بنیادوں پر6.4 فیصد اور بناسپتی گھی کی پیداوارمیں 6.6 فیصد کی نمو ہوئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں