The news is by your side.

Advertisement

وزن میں کمی کیلئے زیرے کا جادوئی اثر

کراچی : انسان کتنا ہی خوش شکل کیوں نہ ہو لیکن اگر اس پر موٹاپا غالب آجائے تو اس کی شخصیت کو گرہن لگ جاتا ہے، آج کل کا دور میں بڑھا ہوا پیٹ ایک المیہ ہے، جس نے ہر مرد اور عورت کو پریشان کر رکھا ہے۔

آپ موٹاپے سے پریشان ہیں تو اس سے نجات کے لیے تصور کیا جاتا ہے کہ ڈائٹنگ یا ورزش کرکے وزن کم کیا جاسکتا ہے لیکن زیرہ قدرت کا ایک ایسا تحفہ ہے جس کا اگر باقاعدگی کے ساتھ استعمال کیا جائے تو یہ 15 سے 20 روز میں وزن کم کرنے خصوصی بڑھے ہوئے پیٹ سے نجات دلانے میں مدد دیتا ہے۔

ماہرین کے مطابق اگر صرف ایک کھانے کا چمچہ زیرہ پاؤڈر روزمرہ غذا میں شامل کرلیا جائے تو دوسرے طریقوں کی نسبت تین گنا تیزی کے ساتھ وزن میں کمی کی جاسکتی ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ زیرے میں” فائٹو اسٹیرول “نامی کیمیائی مادّے بکثرت پائے جاتے ہیں جو جسم میں کولیسٹرول کو جمع ہونے سے روکتے ہیں۔

وزن کی کمی کیلئے زیرہ استعمال کے طریقے

ہ ذیل 4 طریقوں سے زیرے کا استعمال وزن کو کم کرنے اور پیٹ کی چربی سے جان چھڑانے کے لیے مؤثر ثابت ہوتا ہے :

دہی کے ساتھ پسا ہوا زیرہ

دہی ویسے تو وزن میں کمی معاون ہے ، کیونکہ اس کے استعمال سے بھوک کم لگتی ہے اور اس کے استعمال سے جسم میں چربی بننے کی رفتار بھی کم ہو جاتی ہے لیکن اگر دہی کے ساتھ ایک چمچہ پسا ہوا زیرہ ملا کر روزانہ کھایا جائے تو اس سے نہ صرف وزن میں تیزی سے کمی ہوگی بلکہ بڑھے ہوئے پیٹ سے بھی چھٹکارا مل جائے گا۔

پانی کے ساتھ زیرے کا استعمال

ایک گلاس پانی میں دو چمچے زیرہ ڈال کر رات بھر کے لیے بھگو دیں، صبح اس کو اُبال کر چھان لیں اور اس میں آدھا لیموں کا رس شامل کرکے نہار منہ استعمال کریں۔

شہد کے ساتھ زیرے کا استعمال

پانی پسا ہوا زیرہ شامل کرکے اس میں  چند قطرے شہد ملا کر پیئیں۔

ادرک اورلیموں کے ساتھ زیرے کا استعمال

لیموں وزن کم کرنے کے لیے بہترین ہے لیکن اگر رات کے کھانے میں  لیموں اور ادرک کے ساتھ زیرے کا استعمال کیا جائے تو اس سے تیزی سے وزن میں کمی لائی جاسکتی ہے کیونکہ لیموں اور ادرک حراروں کو جلانے کی بھرپور صلاحیت رکھتا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں