The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم کے کامیاب جوان پروگرام کی مقبولیت ،ویب سائٹ ہیک کیلئے بھارت سے سائبر حملے

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان کے کامیاب جوان پروگرام کے خلاف سائبر مافیا متحرک ہوگیا اور ویب سائٹ ہیک کیلئےمختلف ممالک سےسائبر  حملوں کی کوششیں کی گئی ، بھارت سےپروگرام کیخلاف 1 لاکھ 78ہزارسائبر حملے کئےگئے،۔

تفصیلات کے مطابق  وزیراعظم عمران خان کے کامیاب جوان پروگرام کی مقبولیت میں اضاجہ ہوتے ہی  سائبر مافیا بھی متحرک ہوگیا اور ویب سائٹ ہیک کیلئےمختلف ممالک سےسائبر حملوں کی کوششیں کی گئی۔

این ٹی سی کا کہنا ہے کہ  بھارتی ہیکرز نے بھی سائبر حملوں کی کوششیں کیں ، جس کا نیشنل ٹیلی کمیونیکیشن کارپوریشن کی سائبر سکیورٹی ٹیم نے بھرپور دفاع کیا، بھارت  کی جانب سے پروگرام کیخلاف 1 لاکھ 78ہزار سائبر حملے کئےگئے اور حملوں میں ویب سائٹ ہیک اور بلاک کرنے کی کوشش کی گئی۔

حکام کے مطابق تین دن میں66 لاکھ افراد نے کامیاب جوان پروگرام کی ویب سائٹ وزٹ کیا ، کامیاب جوان پروگرام پر اب تک 12ملین سائبرحملے کئے گئے اور ویب سائٹ تمام سائبر حملوں کو ناکام بنا دیا گیا ہے۔

این ٹی سی حکام نے وزیراعظم معاون خصوصی عثمان ڈار کو آگاہ کردیا ہے ، جس کے بعد معاون خصوصی عثمان ڈار کا این ٹی سی میں قائم سکیورٹی  کا ہنگامی  دورہ کیا ، حکام کی سائبر اٹیکس اور بروقت دفاع سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی۔

مزید پڑھیں : کامیاب جوان پروگرام کی زبردست پذیرائی، 72 گھنٹوں میں 1لاکھ 90 ہزار درخواستیں موصول

حکام نے بتایا ویب سائٹ پر 2400 ہٹس پرسیکنڈکی تیاری کرچکےہیں، نظام مکمل فول پروف بنایاہےہیکنگ کامیاب نہیں ہوگی۔

یاد رہے 17 اکتوبر کو وزیراعظم عمران خان نے ملکی تاریخ کے سب سے بڑے فلاحی منصو بے کامیاب جوان پروگرام کا افتتاح کیا تھا ، پروگرام کے تحت نوجوانوں کو ایک لاکھ روپے تک کا بلاسود جبکہ پچاس لاکھ روپے تک کا کم شرح سود پر قرض مل سکے گا۔

وزیراعظم نے افتتاحی تقریب سے خطاب میں کہا تھا کہ ہمارا ٹارگٹ ہوگا اپنے کاروبار کے لیے 10 لاکھ نوجوانوں کو قرضے دیے جائیں، کامیاب جوان پروگرام میں سفارش نہیں چلے گی، میرٹ پر کام ہوگا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ کامیاب جوان پروگرام وزیر اعظم آفس سے مانیٹر کیا جائے گا، میں خود اس کو مانیٹر کروں گا، سارے پاکستان کے لیے ایک یوتھ فاؤنڈیشن بنائیں گے، جس میں نوجوانوں کو ایک دوسرے کو سمجھنے کا موقع ملے گا، کوشش کریں گے پاکستان میں تعلیم کا ایک ہی نصاب آئے، بچوں کو دینی تعلیم کے ساتھ دنیاوی تعلیم اور ٹیکنالوجی بھی دینی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں