The news is by your side.

Advertisement

ڈیری فارمرز کا سرکاری رٹ ماننے سے کھلا انکار، شاکر عمر کا رہائی کے بعد نیا بیان

کراچی: ڈیری فارمرز نے سرکاری رٹ ماننے سے کھلا انکار کر دیا ہے، ایسوسی ایشن کے صدر شاکر عمر گجر نے رہائی کے بعد بیان دیتے ہوئے کہا کہ دودھ کی قیمتیں کم نہیں کریں گے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق گزشتہ رات دودھ مہنگا فروخت کرنے والوں کے خلاف کراچی انتظامیہ نے کریک ڈاؤن شروع کر دیا ہے، ڈیری فارمرز ایسوسی ایشن کے صدر شاکر عمر گجر کو بھی گرفتار کیا گیا تھا تاہم انھیں اب رہا کر دیا گیا ہے۔

گجر ڈیری گلستان جوہر سے ڈی سی ایف اے پاکستان کے صدر شاکر عمر گجر کی پولیس کے ہاتھوں گرفتاری کے وقت فارمرز کی بڑی تعداد گجر ڈیری پر موجود تھی، ذرایع کا کہنا ہے کہ انھیں اعلیٰ افسران کی مداخلت پر رہا کیا گیا ہے۔

ڈیر فارمرز کا کہنا ہے کہ کمشنر کراچی اجناس کی قیمتوں کو قابو کر نہیں پا رہے ہیں ہمارے خلاف کارروائی کر رہے ہیں، دودھ کی قیمتوں میں اضافہ کرنے کے بغیر کوئی چارہ نہیں رہا ہے۔

ڈیری فارمرز ایسوسی ایشن کے صدر شاکر عمر گجر، جن کا مؤقف ہے کہ دودھ کی پیداواری لاگت بڑھنے سے دودھ کی قیمت بڑھائی گئی ہے

صدر شاکر عمر گجر نے رہائی کے بعد بیان دیتے ہوئے کہا کہ دودھ کی قیمتیں کم نہیں کریں گے، اگر ہمارے خلاف کارروائیوں کا سلسلہ نہ رکا تو ہڑتال کر دیں گے۔

کراچی، مہنگا دودھ فروخت کرنے والوں‌ کے خلاف کریک ڈاؤن کا آغاز

دوسری طرف دودھ کی قیمتوں میں اضافے پر کمشنر کراچی کی ہدایت پر ڈپٹی کمشنرز کا دودھ کی دکانوں پر ایکشن جاری ہے، آج شہر کی متعدد دودھ کی دکانوں کو سیل کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز سے دودھ مہنگا فروخت کرنے والوں کے خلاف کراچی انتظامیہ نے کریک ڈاؤن شروع کیا ہے، اس دوران 76 دودھ فروشوں کے خلاف کارروائی کی گئی، 4 لاکھ 56 ہزار روپے سے زائد کے جرمانے عائد کیے گئے۔

کشمنر کراچی کی جانب سے شہریوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ منافع خوروں کی نشان دہی کریں اور کنٹرول روم میں شکایت درج کرائیں، دودھ مہنگا فروخت کرنے والوں سے کوئی رعایت نہیں کی جائے گی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں