site
stats
اہم ترین

وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون کا مستعفی ہونے کا اعلان

برطانوی وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون نے ریفرنڈم پر ناکامی پر عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

برطانوی عوام کی جانب سے یورپی یونین چھوڑنے کا فیصلہ سامنے آنے کے بعد برطانیہ کے وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون نے مستعفی ہونے کا اعلان کیا ہے۔

ڈیوڈ کیمرون کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ برطانوی عوام کے یورپی یونین سے نکلنے کے فیصلے کا احترام کرتے ہیں، تین ماہ بعد عہدہ چھوڑ دوں گا، عوام اکتوبر تک اپنے نئے وزیراعظم کا انتخاب کرلیں۔

انکا مزید کہنا تھا کہ ملک کو اب ایک نئے وزیراعظم کی ضرورت ہے، جو یورپی یونین سے مزاکرات کرے گا اُسے پایہ تکمیل تک پہنچائے۔

ڈیوڈ کیمرون نے کہا کہ یورپی باشندے برطانیہ میں رہ سکتے ہیں ، ریفرنڈم کا انعقاد پارلیمانی نظام کا حصہ ہے، چھ سال تک برطانیہ کا وزیر اعظم بنے رہنے پر فخر ہے، برطانیہ کی معیشت مضبوط اور مستحکم ہے اور سرمایہ کاروں کو یقین دلاتا ہوں کہ برطانوی معیشت کی بہتری کیلئے ہر ممکن اقدام کریں گے۔

انکا کہنا تھا کہ ہمیں اب یورپی یونین سے بات چیت کے لیے تیار ہونا ہوگا، جس کے لیے سکاٹ لینڈ، ویلز اور شمالی ایئر لینڈ کی حکومتوں کو مکمل ساتھ دینا ہو گا تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے کہ برطانیہ کے تمام حصوں کے مفادات کا تحفظ ہو۔

مزید پڑھیں :  برطانوی عوام کا یورپی یونین سے علیحدگی کا فیصلہ

یاد رہے کہ 43سال بعد تاریخی ریفرنڈم کے نتائج کے مطابق 52 فیصد عوام نے یورپی یونین سے علیحدگی ہونے کے حق میں جبکہ 48 فیصد نے یونین کا حصہ رہنے کے حق میں ووٹ دیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top