The news is by your side.

Advertisement

حج 2020، وقوفِ عرفہ کی تصویری جھلکیاں

ریاض: فریضہ مقدسہ ادا کرنے والے عازمین نے آج حج کا رکن اعظم ادا کیا اور عرفات کے میدان میں حج کا خطبہ سنا۔ کرونا وبا کے پیش نظر عازمین نے اس دوران سماجی فاصلے کی احتیاطی تدبیر پر سختی سے عمل کیا۔

اسلام کا پانچواں فرض ادا کرنے والے خوش نصیب عازمین  گزشتہ روز یعنی 8 ذوالحجۃ کو منیٰ میں قیام کیا اور رب کی تعریف و تسبیح بیان کرتے ہوئے اپنے گناہوں کی مغفرت طلب کی، عازمین نے 8 ذوالحجۃ کی نمازِ ظہر ، عصر اور مغرب پھر 9 ذوالحجۃ شروع ہونے کے بعد عشاء اور فجر کی نماز منیٰ میں ہی ادا کی اور احکاماتِ شریعہ کے مطابق رات وہیں گزاری۔

فجر کی نماز ادا کرنے کے بعد عازمین تلبیہ (لَبَّیک، اَللّٰهمَّ لَبَّیک، لَبَّیکَ لَا شَرِیکَ لَکَ لَبَّیک، اِنَّ الْحَمْدَ وَالنِّعْم لَکَ وَالْمُلْک لَاشَرِيکَ لَک) باآواز بلند پڑھتے وقوفِ عرفہ کے لیے میدان عرفات پہنچے۔

عرفات پہنچنے کے بعد عازمین نے خطبہ حج سُنا اور ظہر عصر کی نمازیں ادا کیں، بعد ازاں غروبِ آفتاب تک قبلۂ رخ کھڑے ہوکر خوب دعائیں کیں۔

مزید پڑھیں: اللہ پاک انسانوں کو وباؤں اورآفات سے دور رکھے، خطبہ حج

غروبِ آفتاب کے بعد عازمین تلبیہ پڑھتے ہوئے عرفات سے مزدلفہ روانہ ہوئے اور اب سے کچھ دیر قبل وہاں پہنچ کر مغرب و عشاء کی نمازیں ایک اذان و اقامت کے ساتھ عشاء کے وقت ادا کیں۔

عازمین آج یعنی 9 اور 10 ذوالحجۃ کی رات  مزدلفہ میں گزاریں گے اور فجر کی نماز ادا کرنے کے بعد دعائیں کر کے منیٰ کے لیے روانہ ہوجائیں گے، جہاں وہ بڑے یعنی آخری جمرات (شیطان) کو کنکریاں ماریں گے۔

بعد ازاں قربانی کر کے  بال منڈوائیں گے اور احرام اتار دیں گے اور پھر طوافِ زیارت (حج کا طواف یا سعی) کا رکن ادا کریں گے۔

گیارہوں اور 12 ویں ذوالحجۃ کو عازمین منی میں قیام کریں گے اور زوال کے بعد جمرات کو 7، 7 کنکریاں ماریں گے،  جمرات کو کنکریاں مارنے کے بعد عازم کو منیٰ چھوڑنے کی اجازت ہوگی۔

تیرہوں ذوالحجۃ کو اگر کوئی عازم منیٰ سے روانہ نہیں ہوسکا تو اُس کو حکم ہے کہ وہ زوال کے بعد تینوں جمرات کو کنکریاں مارے۔

خیال رہے سعودی عرب نے کرونا کی وبا کے پیش نظر محدود پیمانے پر حج کا اعلان کیا ہے۔ رواں سال صرف دس ہزار افراد کو فریضہ مقدسہ کی ادا کرنے کی سعادت حاصل کررہے ہیں۔

عازمین کا انتخاب خودکار طریقے سے کیا گیا، جن میں 30 فیصد مقامی اور 70 فیصد غیر ملکی تارکین ہیں، منتخب عازمین کے پہلے گروپ کو ہفتے کے روز مکہ مکرمہ پہنچایا گیا، جہاں وہ ایامِ حج کے آغاز سے قبل ایک ہوٹل میں علیحدہ علیحدہ کمروں میں مقیم رہے۔

حج کے رکن شروع ہونے سے قبل تمام عازمین کا کرونا کی تشخیص کا ٹیسٹ بھی کیا گیا، محکمہ صحت نے تصدیق کی کہ کسی بھی حاجی کو کرونا کی تشخیص نہیں ہوئی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں