The news is by your side.

Advertisement

قصور: تین لاپتا بچوں کی مسخ شدہ لاشیں برآمد، علاقے میں خوف کی لہر

پتوکی: ضلع قصور کی تحصیل پتوکی میں چونیاں بائی پاس کے قریب تین لاپتا بچوں کی مسخ لاشیں اور انسانی اعضا برآمد ہوئے ہیں.

تفصیلات کے مطابق ضلع قصور میں بچوں کی مسخ لاشیں ملنےکے واقعے نے سنسنی پھیلا دی ہے، زینب  قتل کیس پھر تازہ ہوگیا۔

پتوکی میں تین بچوں کی لاشیں ملی ہیں،  ایک بچےکی لاش مکمل حالت میں، جب کہ دوبچوں کے سر  اور ہڈیاں برآمد ہوئیں۔

قتل ہونے والا آٹھ سال کا فیضان پیرکو لاپتا ہوا تھا، سلیمان دس اگست اور  علی حسنین ایک ماہ سےلاپتا تھے، علاقہ مکینوں کے مطابق بچوں کے لاپتا ہونے کا سلسلہ دو  ماہ سے جاری ہے، مگر کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔

اس ضمن میں آئی جی پنجاب کا کہنا ہے کہ حالیہ واقعات میں مماثلت پائی گئی ہے، تفتیش جاری ہے، انویسٹی گیشن کے لئے خصوصی ٹیم چونیاں روانہ کردی ہے، جب کہ پنجاب فرانزک کی ٹیموں نے موقع سے اہم شواہد اکٹھے کر لیے ہیں۔

ادھر تنقید کے جواب میں  ڈی پی او قصور نے ہاتھ کھڑے کرلیے، ان کا کہنا ہے کہ ہم ہر گلی میں پولیس والا نہیں کھڑا کرسکتے، لاش اور اعضا ملنے کے معاملے کی وجہ سے علاقے میں‌خوف و ہراس پایا جاتا ہے.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں