The news is by your side.

Advertisement

دیر بالا میں تدفین کے وقت کفن میں لپٹی مردہ بچی رو پڑی

دیر بالا: خیبر پختونخوا کے ضلع دیر بالا میں ڈاکٹر کی غفلت کے باعث زندہ بچی دفن ہونے سے بال بال بچ گئی، کفن میں لپٹی بچی تدفین کے وقت اچانک رو پڑی۔

تفصیلات کے مطابق دیر بالا میں ڈاکٹر کے ہاتھوں مردہ قرار دی گئی بچی زندہ نکلی، تدفین کے وقت کفن میں لپٹی بچی رو پڑی، بچی کو زندہ پا کر والدین خوشی سے نہال ہو گئے۔

چائلد اسپیشلسٹ نے بے حس و حرکت پڑی بچی کے مردہ ہونے کی تصدیق کر دی تھی۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق دیر بالا میں ڈاکٹر نے نا اہلی کی انتہا کر دی، ڈی ایچ کیو کے ڈاکٹر نے ایک ماہ کی زندہ بچی کو مردہ قرار دے دیا۔

شیر خوار بچی کو سانس کی تکلیف پر اسپتال لایا گیا تھا، چائلد اسپیشلسٹ نے معائنے کے بعد بے حس و حرکت پڑی بچی کے مردہ ہونے کی تصدیق کر دی۔

بچی کی موت کی خبر پر گھر میں ماتم شروع ہو گیا، تاہم جب بچی کو کفن میں لپیٹ کر قبرستان لے جایا گیا تو وہ اچانک رو پڑی۔


یہ بھی پڑھیں:  بھارت میں مردہ سمجھ کرزندہ لڑکی چتا میں جلادی


مردہ قرار دی جانے والی بچی کو فوراً دوبارہ اسپتال منتقل کر دیا گیا، دوسری طرف والدین نے انتہائی غفلت برتنے پرڈاکٹر کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کر دیا۔

رپورٹ کے مطابق بچی کے زندہ ہو جانے کی خبر پر روتے والدین کے آنسو مسکراہٹوں میں بدل گئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں