The news is by your side.

Advertisement

پنجاب حکومت اور اپوزیشن میں ڈیڈلاک برقرار،بجٹ اجلاس آئندہ ماہ تک ملتوی کرنےکی تجویز

لاہور : پنجاب حکومت اوراپوزیشن میں ڈیڈلاک کے بعد صوبائی وزرا نے بجٹ اجلاس آئندہ ماہ تک ملتوی کرنے کی تجویز دے دی۔

تفصیلات کے مطابق حکومت اور اپوزیشن کے درمیان پنجاب اسمبلی بجٹ اجلاس پر ڈیڈ لاک برقرار ہے ، صوبائی وزرا اور بیشتر لیگی رہنماؤں نے بجٹ اجلاس آئندہ ماہ تک ملتوی کرنے کی تجویز دے دی ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ وزرا اور لیگی ارکان نے بجٹ 20خالی نشستوں کےانتخاب کے بعد کرانے کی تجویز دی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ سے مشاورت میں آئی جی اور چیف سیکرٹری کوکسی صورت ایوان میں پیش نہ کرنےکا فیصلہ کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی رہنماؤں کے خلاف مقدمات خارج کرنے کے لیے تحقیقات پر کام بند کردیا گیا ہے ، ایڈووکیٹ جنرل ،ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ نے تحقیقات پر کام بند کیا۔

ذرائع نے کہا ہے کہ اسپیکر افسران کا معاملہ استحقاق یا خصوصی کمیٹی میں لے جاناچاہیں تو حکومت حمایت کرے گی،حکومت کے پاس جولائی تک محکموں کو چلانے کےلیےوسائل موجود ہیں۔

گذشتہ روز پنجاب کا بجٹ پیش کرنے سے پہلے حکومت اور اپوزیشن کے درمیان پنجاب اسملبی میں بزنس ایڈوائزری کمیٹی کا اجلاس ہوا تھا۔

تحریک انصاف نے مطالبہ کیا تھا کہ پی ٹی آئی کے کارکنوں اور رہنماؤں پر درج مقدمات واپس لیے جائیں جبکہ بجٹ سے قبل آئی جی پنجاب ایڈوائزری کمیٹی کے سامنے پیش ہو کر معافی مانگیں اور اسمبلی اسٹاف پر درج مقدمات بھی واپس لیے جائیں۔

تاہم وزیر اعلیٰ آفس نے اپوزیشن مطالبات کو مسترد کردیا تھا اور حکومتی ٹیم نے وزیراعلیٰ سے مشاورت کے بعد اپنی شرائط پیش کی تھیں۔

حکومت کا کہنا تھا کہ ارکان اسمبلی پر درج ہونے والے مقدمات کی مکمل تحقیقات کی جائیں گی، تحقیقات ہونگی کہ وزیراعلیٰ کے انتخاب کے دوران کیا کچھ ہوا، تحقیقات کے بغیر کسی قسم کا معاہدہ قبول نہیں ہو گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں