The news is by your side.

Advertisement

متعدد اعزازات اپنے نام کرنے والے مشہور پہلوان محمد بشیر کی برسی

24 جون 2001ء کو پاکستان کے مشہور پہلوان محمد بشیر کو موت نے پچھاڑ کر زندگی کے پالے سے ہمیشہ کے لیے باہر کردیا۔

محمد بشیر نے 1960ء میں منعقدہ روم اولمپکس میں کشتی کے مقابلوں میں کانسی کا تمغہ اپنے نام کیا تھا۔ کشتی کے کھیل میں اولمپک مقابلوں کے لیے اب تک کسی پاکستانی کھلاڑی کا یہ واحد تمغہ ہے۔

محمد بشیر اس سے قبل 1958ء کے ایشیائی کھیلوں میں کشتی ہی کے کھیل میں کانسی کا تمغہ حاصل کرچکے تھے۔ بعدازاں انھوں نے 1962ء کے ایشیائی کھیلوں میں چاندی کا اور 1966ء کے ایشیائی کھیلوں میں سونے کا تمغہ حاصل کیا۔

حکومتِ پاکستان نے کشتی کے کھیل میں محمد بشیر کی کام یابیوں اور فتوحات کا اعتراف کرتے ہوئے انھیں تمغہ امتیاز اور صدارتی تمغہ برائے حسنِ کارکردگی عطا کیا تھا۔

اپنے دور کے اس مشہور پہلوان کو لاہور میں میانی صاحب کے قبرستان میں سپردِ خاک کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں