The news is by your side.

Advertisement

یومِ‌ وفات: ‘آنگن ٹیڑھا’ کے ‘اکبر’ نے سلیم ناصر کو لازوال شہرت عطا کی

ٹیلی ویژن ڈراموں میں اپنی لاجواب اداکاری کی بدولت ناظرین میں مقبول ہونے والے سلیم ناصر 19 اکتوبر 1989ء کو دارِ‌ فانی سے کوچ کرگئے تھے۔ آج ان کی برسی منائی جارہی ہے۔

سلیم ناصر نے 15 نومبر 1944ء کو بھارت کے شہر ناگپور میں آنکھ کھولی اور قیام پاکستان کے بعد اپنے خاندان کے ساتھ ہجرت کرکے کراچی آگئے۔

سلیم ناصر نے اپنی فنی زندگی کا آغاز پاکستان ٹیلی وژن کے لاہور مرکز کے ایک ڈرامے ’’لیمپ پوسٹ‘‘ سے کیا تھا۔ کراچی میں مستقل رہائش کے بعد انھوں نے چھوٹی اسکرین پر مختلف کردار نبھائے جن میں ان کے سنجیدہ اور مزاحیہ انداز کو ناظرین نے بے حد پسند کیا۔ انھوں نے اپنے وقت کے مقبول ڈراموں دستک، نشان حیدر، آخری چٹان، یانصیب کلینک، بندش اور ان کہی میں کام کیا جب کہ انور مقصود کا تحریر کردہ آنگن ٹیڑھا وہ ڈرامہ تھا جس نے انھیں امر کردیا۔ اس میں انھوں نے اکبر کا کردار نبھایا تھا جس کے مزاحیہ مکالمے اور سلیم ناصر کا مخصوص انداز بے انتہا پسند کیا گیا۔

سلیم ناصر نے فلم میں بھی اداکاری کے جوہر دکھائے۔ انھیں حسن کارکردگی ایوارڈ سے بھی نوازا گیا تھا۔ وہ کراچی میں ڈیفنس سوسائٹی کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں