The news is by your side.

Advertisement

پاک و ہند کے مشہور طبلہ نواز استاد اللہ رکھا خان کی برسی

3 فروری 2000ء کو پاک و ہند کے مشہور طبلہ نواز استاد اللہ رکھا خان قریشی وفات پاگئے تھے۔ استاد اللہ رکھا خان نے دنیا بھر میں اپنے فن کا مظاہرہ کیا اور اپنے وقت کے نام ور موسیقاروں کی سنگت میں اپنے فن کا لوہا منوایا۔

استاد اللہ رکھا خان 29 اپریل 1919ء کو جمّوں میں پیدا ہوئے تھے۔ 12 برس کی عمر میں طبلہ بجانے کی تربیت کا آغاز کیا۔ وہ نام ور طبلہ نواز میاں قادر بخش کے شاگرد تھے۔

استاد اللہ رکھا خان نے اپنے اس فن کے پیشہ ورانہ مظاہرے کا آغاز آل انڈیا ریڈیو، لاہور اسٹیشن سے کیا تاہم بعد میں بمبئی اسٹیشن میں بطور اسٹاف آرٹسٹ ملازم ہوگئے۔ 1943ء سے 1948ء کے دوران وہ فلمی دنیا سے بھی منسلک رہے اور بعد میں مشہور موسیقاروں کی سنگت شروع کی۔ استاد اللہ رکھا خان نے نام ور موسیقاروں جن میں استاد بڑے غلام علی خان، استاد علاء الدین خان، استاد وسنت رائے اور نام ور ستار نواز استاد روی شنکر شامل ہیں، کے ساتھ اپنے فن کا مظاہرہ کیا اور خوب داد سمیٹی۔

طبلہ نوازی کے فن کو مقبول بنانے میں بھی انھوں نے اہم کردار ادا کیا۔ ان کے صاحب زادے استاد ذاکر خان بھی اس فن میں‌ طاق ہوئے اور ان کا شمار مقبول طبلہ نوازوں میں ہوا۔

استاد اللہ رکھا خان نے ممبئی میں‌ وفات پائی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں