The news is by your side.

Advertisement

کرکٹ: پاکستان کے مایہ ناز آل راؤنڈر وسیم حسن راجہ کی برسی

آج وسیم حسن راجہ کا یومِ‌ وفات ہے جو کرکٹ کے مایہ ناز آل راؤنڈر تھے۔ وسیم حسن راجہ لندن میں ایک کلب میچ میں دورانِ فیلڈنگ دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کرگئے تھے۔

23 اگست 2006ء کو میچ کے دوران انھوں نے اپنے ساتھی فیلڈروں کو بتایا کہ انھیں چکر آ رہے ہیں جس کے بعد انھیں میدان سے باہر لے جایا جارہا تھا کہ باؤنڈری لائن پر ان کی روح قفسِ عنصری سے پرواز کرگئی۔

وسیم راجہ پاکستان ٹیم کے کوچ بھی رہے اور آئی سی سی کے ریفری بھی۔ وہ 3 جولائی 1952ء کو ملتان میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کے بھائی رمیز راجہ بھی پاکستان کرکٹ ٹیم کا حصّہ رہے ہیں اور بین الاقوامی سطح پر بہترین کھلاڑی اور ماہر کی حیثیت سے نام و مقام رکھتے ہیں۔

وسیم راجہ نے 1973ء میں نیوزی لینڈ کے خلاف میچ سے اپنے ٹیسٹ کیریئر کا آغاز کیا اور مجموعی طور 57 ٹیسٹ میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کی۔ انھوں نے مجموعی طور پر2821 رنز اسکور کیے جن میں 4 سنچریاں اور 18 نصف سنچریاں شامل تھیں۔ اس کے علاوہ 35.80 کی اوسط سے 51 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا اور 54 ایک روزہ بین الاقوامی میچ کھیلے۔ انھوں نے مجموعی طور پر 728 رنز اسکور کیے۔

وسیم راجہ دائیں ہاتھ سے گیند کرنے والے لیگ سپن بالر تھے۔ وہ گگلی بھی پھینکتے تھے اور بائیں ہاتھ سے جارحانہ بیٹنگ کرنے والے مڈل آڈر بلے باز تھے۔

انھوں نے پاکستان کی طرف سے آخری ٹیسٹ میچ نیوزی لینڈ کے خلاف 1985ء میں کھیلا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں