The news is by your side.

Advertisement

یومِ وفات: یونس پہلوان کو “ستارۂ پاکستان” کا خطاب دیا گیا تھا

ستارۂ پاکستان کا خطاب پانے والے یونس پہلوان 6 جون1964ء کو انتقال کر گئے تھے۔ آج پاکستان کے اس مشہور پہلوان کی برسی منائی جارہی ہے۔ ان کا اصل نام یونس خان تھا جو تن سازی کے شوق اور کشتی کے کھیل کے سبب ہر خاص و عام میں یونس پہلوان مشہور ہوگئے۔

یونس خان 30 دسمبر 1925ء کو گوجرانوالہ میں پیدا ہوئے۔ وہ رستمِ ہند رحیم پہلوان سلطانی والا کے شاگرد تھے۔ انھوں نے پہلا دنگل 1941ء میں لڑا تھا اور اس کے اگلے برس رستم پنجاب چراغ نائی پہلوان سے مقابلہ کیا جس میں حریف کو شکست دے کر رستمِ پنجاب کا ٹائٹل اپنے نام کرنے میں کام یاب ہوئے۔

رستمِ پنجاب کا خطاب پانے کے بعد انھوں نے متعدد مقابلوں میں پہلوانوں کو یکے بعد دیگرے شکست دی۔ 1948ء میں منٹو پارک لاہور میں یونس نے بھولو پہلوان سے مقابلہ کیا جس میں ناکام رہے۔ 1949ء میں یہ دونوں پہلوان ایک مرتبہ پھر کراچی میں‌ آمنے سامنے تھے، لیکن قسمت نے یاوری نہ کی اور یونس پہلوان اس مرتبہ بھی بھولو کو نہ ہرا سکے اور رستمِ پاکستان کا اعزاز ان کے ہاتھ سے نکل گیا۔ تاہم ایک زور آور اور بہترین کھلاڑی کی حیثیت سے یونس پہلوان نے اپنی شہرت قائم رکھی تھی۔

یونس پہلوان گوجرانوالہ کے مرکزی قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں