The news is by your side.

Advertisement

سندھی زبان کے مشہور شاعر، ادیب اور صحافی انور پیرزادو کی برسی

سندھی اور انگریزی زبان کے مشہور شاعر، ادیب اور صحافی انور پیرزادو 7 جنوری 2007ء کو انتقال کرگئے تھے۔ آج ان کی برسی ہے۔ انور پیرزادو سندھ کے ضلع لاڑکانہ سے تعلق رکھتے تھے۔

25 جنوری 1945ء کو پیدا ہونے والے انور پیرزادو(انور پیرزادہ) نے 1969ء میں انگریز ادبیات میں ایم اے کے بعد سندھ یونیورسٹی میں بطور لیکچرار عملی زندگی کا آغاز کیا، لیکن بعد میں صحافت سے وابستہ ہوگئے۔ وہ لاڑکانہ اور سکھر میں نامہ نگار کی حیثیت سے فرائض انجام دیتے رہے اور بعد میں مختلف اخبارات عوامی آواز، برسات، سندھ ٹریبیون اور ریجنل ٹائمز آف سندھ کے مدیر کی حیثیت سے کام کیا۔

انور پیرزادو کا شمار ان صحافیوں اور قلم کاروں میں ہوتا ہے جنھوں نے آزادیِ صحافت کی جدوجہد میں حصّہ لیا اور انھیں دو مرتبہ جیل بھی جانا پڑا۔ انور پیرزادو کی سندھی شاعری کا مجموعہ اے چند بھٹائی کھے چھیجن کے نام سے اشاعت پذیر ہوا تھا۔ ان کی مرتب کردہ انگریزی کتب میں سندھ گزیٹئر، لاڑکانہ گزیٹئر اور بے نظیر بھٹو اے پولیٹیکل بائیو گرافی شامل ہیں۔

انور پیرزادو نے اس زمانے میں نہ صرف خود تعلیم حاصل کرکے عملی زندگی میں قدم رکھا اور لکھنے پڑھنے کا سلسلہ جاری رکھا بلکہ اپنے علاقے کے لوگوں کو بھی تعلیم کی اہمیت سے آگاہ کرتے ہوئے ان میں شعور پیدا کرنے کے لیے کوشاں رہے۔

سندھی ادب میں اپنی تخلیقات اور سرگرمیوں سے نام و پہچان بنانے کے ساتھ ساتھ انور پیرزادو نے انگریزی صحافت میں بھی خوب نام پیدا کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں