The news is by your side.

Advertisement

مکہ کے قریب پبلک ٹیکسی سروس پر پابندی لگانے کا فیصلہ

مکہ المکرمہ: سعودی عرب کی وزارت مواصلات نے مکہ المکرمہ میں مسجد الحرام کے گردونواح پبلک ٹیکسی سروس پر پابندی لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق پبلک ٹیکسی سروس پر پابندی کا فیصلہ اس لئے کیا گیا ہے کہ 6 ماہ بعد مسجد الحرام کے اطراف ’’اجرۃ الحرم‘‘ کے نام سے اعلیٰ درجے اور موثر نوعیت کی اسپیشل الحرم ٹیکسی کو سروس کو کامیاب بنایا جاسکے۔

اجرۃ الحرام ٹیکسی سروس کا آغاز ہونے کے بعد حرم شریف کے علاقے میں الحرم ٹیکسی کے سوا کسی بھی پبلک ٹیکسی کو آنے کی اجازت نہیں ہوگی۔

پبلک ٹرانسپورٹ کے سربراہ رمیح الرمیح کا کہنا ہے کہ یہ منصوبہ چھ ماہ کے اندر نافذ کردیا جائے گا، اس سے حجاج اور معتمرمین بڑے پیمانے پر فائدہ اٹھا سکیں گے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب کی وزارت مواصلات کی جانب سے نئی ٹیکسی سروس کے روٹس اور کرائے کے بارے میں ابھی آگاہ نہیں کیا گیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں