The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم، تحریری فیصلہ جاری

لاہور : لاہور ہائیکورٹ کی جانب سے نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے حکم نامے کے بعد تحریری فیصلہ بھی جاری کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ نواز کے سربراہ و سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کا نام لاہور ہائیکورٹ کے 2 رکنی بینچ کی جانب سے تحریری فیصلہ جاری کردیا۔

عدالت کا کہنا ہے کہ نواز شریف کو ایک بار 4 ہفتے کیلئے جانے کی اجازت دیتے ہیں، نواز شریف کو جب ڈاکٹر صحت مند قرار دیں تو وہ واپس آجائیں۔

عدالت نے فیصلے میں کہا ہے کہ رجسٹرار ہائیکورٹ نواز شریف، شہباز شریف کے دستخط شدہ بیان حلفی جمع کریں، تمام کوششوں کے باوجود وکلا میں اتفاق رائے پیدا نہ ہوسکا۔

بینچ کا کہنا تھا کہ نوازشریف کی درخواست کو باقاعدہ سماعت کیلئے منظور کیا جاتا ہے، جنوری 2020 کے تیسرے ہفتے میں کیس کی سماعت کی جائے گی۔

خیال رہے کہ حکومت نے ڈیڑھ ارب کے انڈیمنٹی بانڈ کی شرط عائد کی تھی، عدالتی فیصلے کے بعد بیان حلفی کے بعد انڈیمنٹی بانڈکی شرط کو معطل کیا جاتا ہے۔

نوازشریف کی کل یا پیر کو لندن روانگی کا امکان

واضح رہے کہ لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیتے ہوئے نوازشریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دے دی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نوازشریف کی طبیعت بہترہوئی توکل یا پھر پیرتک لندن روانگی کاامکان ہے، نوازشریف پہلےلندن جائیں گے اور ڈاکٹرزنےتجویزدی تونوازشریف کسی اورملک لے جایا جائے گا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں