The news is by your side.

Advertisement

ملاعمر کی ہلاکت پاکستان میں نہیں ہوئی، خواجہ آصف

اسلام آباد: وزیرِدفاع خواجہ آصف نے ملاعمر کی پاکستان میں ہلاکت کی خبروں کو بے بنیاد قرار دے دیا۔

وزیرِدفاع خواجہ آصف نے گردش کرتی افواہوں کا خاتمہ کردیا، قومی اسمبلی اجلاس سے خطاب میں وزیرِ دفاع نے واضح کردیا کہ ملاعمر کی کراچی یا کوئٹہ سمیت پاکستان میں موت کی خبریں جھوٹی ہیں، ملا عمر کا انتقال پاکستان میں نہیں ہوا اور نہ ہی ان کی تدفین یہاں کی گئی۔

خواجہ آصف نے کہا کہ افغانستان میں امن کے قیام کا خواہاں ہے، خواہش ہے کہ افغانستان میں امن مذاکرات جاری رہیں، انھوں نے کہا کہ ہماری خواہش ہے کہ افغانستان میں امن مذاکرات کا سلسلہ جاری رہنا چاہئے، پاکستان افغانستان میں امن کا قیام چاہتا ہے۔

خواجہ آصف نے کہا کہ ہم طالبان قیادت کے جھگڑے میں نہیں پڑنا چاہتے۔

اُنھوں نے کہا کہ افغان طالبان اور افغانستان کی حکومت کے درمیان مذاکرات میں امریکہ اور چین بطور مبصر شرکت کر رہے ہیں اور پاکستان بھی اُس میں بطور مبصر یا ثالث کردار ادا کر رہا ہے۔

یاد رہے کہ افغان طالبان کے سربراہ ملا عمر کے انتقال کی تصدیق گزشتہ ہفتے کی گئی، جس کے بعد یہ خبریں بھی سامنے آتی رہیں کہ اُن کا انتقال پاکستان میں ہوا، تاہم افغان طالبان کے ترجمان کی طرف سے اس کی تردید کی جاچکی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں