The news is by your side.

Advertisement

کشمیریوں کی آواز دبانے کے لیے دلی سرکار نے مقبوضہ کشمیر کو جیل بنا دیا

سری نگر: کشمیریوں کی آواز دبانے کے لیے دلی سرکار نے مقبوضہ کشمیر کو جیل بنادیا، وادی میں چوتھے روز بھی کرفیو نافذ ہے۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیرمیں چوتھے روز بھی کرفیو نافذ ہے، ٹی وی نشریات، لینڈ لائن، موبائل فون اور انٹرنیٹ سروس بند کردی گئی ہے، کرفیو کے سبب اشیائے خوردونوش کی قلت ہوگئی ہے۔

قابض بھارتی فوج نے آزادی کے پانچ سو متوالوں کو پابند سلاسل کردیا، کانگریس رہنما غلام نبی کو سری نگر ایئرپورٹ سے واپس دہلی بھیج دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بھی قابض بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں مظاہرین پر اندھا دھند فائرنگ کردی تھی جس کے نتیجے میں 6 کشمیری شہید اور 100 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

مزید پڑھیں: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشت گردی، کرفیو، عوام پر فائرنگ، 6 کشمیری شہید

یاد رہے کہ چند روز قبل مودی سرکار نے آرٹیکل 370 کو منسوخ کرکے کشمیر کو حاصل خصوصی حیثیت کو ختم کردیا تھا اور کشمیر کو دو حصوں میں تقسیم کرکے بھارتی یونین کا حصہ بنادیا تھا جس کے بعد سے کشمیری رہنما گرفتار، کرفیو نافذ اور ٹیلی فون سروس معطل ہے۔

خیال رہے کہ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں مسلم اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کے گھناؤنے منصوبے پر اقوام متحدہ نے بھی شدید تشویش کا اظہار کیا ہے۔

ترجمان اقوام متحدہ کا کہنا تھا کہ پاک بھارت تصفیہ طلب مسائل کا مذاکرات سے حل نکالا جائے، اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیش کش بھی کر چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں