The news is by your side.

Advertisement

پشاور میں ڈینگی کے پھیلنے کی خبریں حقیقت پرمبنی نہیں ہیں، ڈی جی ہیلتھ خیبرپختونخوا

پشاور : ڈی جی ہیلتھ خیبرپختونخوا نے کہا ہے کہ پشاور میں ڈینگی کے پھیلنے کی خبریں حقیقت پرمبنی نہیں ہیں، پولیو کی طرح اب ڈینگی کے حوالے سے بھی افواہیں پھیلائی جارہی ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پشاور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ڈی جی ہیلتھ محمد ارشد نے کہا کہ پشاور، مردان، سوات، کرم اور ہری پور میں کافی عرصے سے ڈینگی رہا ہے۔

پشاور میں چند نواحی علاقے ڈینگی کی لپیٹ میں آچکے ہیں، میں نے ڈپٹی کمشنر کے ساتھ ان علاقوں کا تفصیلی دورہ بھی کیا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ڈینگی پھیلنے کی خبریں حقیقت پرمبنی نہیں ہیں، یہ وہ علاقے ہیں جہاں پہلے بھی پولیو کےخلاف افواہ پھیل چکی تھی۔

پولیو کی طرح اب ڈینگی کےحوالے سے بھی منصوبہ بندی کے تحت افواہیں پھیلائی جارہی ہے،2017میں ایک لاکھ26ہزار سے زائد ڈینگی کے کیسز رپورٹ ہوئے،2017میں صرف24ہزار مریضوں میں ڈینگی کی تصدیق ہوئی۔

پشاور میں اب تک1100ڈینگی مریض رپورٹ ہوئے ہیں،400 میں تصدیق ہوگئی، ان کا مزید کہنا تھا کہ جنوری سے ہرضلع میں ڈینگی کے لئے کنٹرول روم بنایا گیا ہے۔

تمام بڑے اسپتالوں میں ڈینگی کے الگ بستر مختص کیے گئے ہیں، اس کے علاوہ اسپتالوں میں این ایس ون ٹیسٹ بالکل فری ہیں۔

ڈی جی ہیلتھ خیبرپختونخوا نے کہا کہ میڈیا نمائندے ڈینگی کےحوالےسےفوکل پرسن سےرابطہ کریں، کتے کے کاٹنے کی ویکسین پوری دنیا میں کم ہے لیکن ہمارے پاس موجود ہے اگر کتے کے کاٹنے اور ڈینگی سے بچنا ہے تو صوبے میں کتا مار اور مچھر مار مہم شروع کرنا پڑے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں