The news is by your side.

Advertisement

کراچی، وائٹ سیل بلڈ کے نام پر پلازمہ کی فروخت کا انکشاف

کراچی: شہر قائد میں وائٹ سیل بلڈ کے نام پر پلازمہ کی فروخت کا انکشاف ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اے آر وائی نیوز کے پروگرام ’ذمہ دار کون‘ کے اسٹنگ آپریشن میں کراچی میں وائٹ سیل بلڈ کے نام پر پلازمہ کی فروخت کا انکشاف ہوا، کے کے ایف اور پٹیل اسپتال کے نام سے میگا یونٹ کی فروخت کی جانے لگی۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز کے مطابق ہمیں اطلاعات موصول ہوئی تھیں کراچی میں ایک ایسی مافیا سرگرم ہے جو کہ میگا یونٹ کی فروخت کررہی ہے۔

اسٹنگ آپریشن کے دوران اے آر وائی کی ٹیم نے شہر کے مختلف مقامات سے میگا یونٹ 16 سے 20 ہزار روپے میں خریدے، جس میں حیران کن طور پر سیل موجود ہی نہیں تھے یا کچھ ایسے میگا یونٹ تھے جس میں سیل کی مقررہ مقدار موجود نہیں تھی۔

اسٹنگ آپریشن میں انکشاف ہوا کہ ڈینگی کے مریضوں کو جو میگا یونٹ لگائے جارہے تھے اس سے ان کو فائدہ نہیں ہورہا تھا، ایسے پلازمہ بھی ملے جن میں سیل کی مقدار کم تھی۔

رپورٹ کے مطابق کراچی کے 2 ایسے بلڈ بینک تھے جنہیں ماضی میں بند کیا جاچکا ہے ان کے نام سے بھی میگا یونٹ فروخت کیے جارہے تھے۔

کے کے ایف، پٹیل اسپتال کا موقف ہے کہ میگا یونٹ آج کل تیار ہی نہیں ہورہے جبکہ ایس بی ٹی اے حکام کی جانب سے غیرمعیاری خون کی فروخت پر آپریشن کرنے کے بجائے سرسری کارروائیاں کی گئیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں