site
stats
سندھ

انٹر بورڈ کے ڈپٹی کنٹرولر امتحانات دبیر احمد گرفتار

کراچی : انٹر بورڈ میں کرپشن اسکینڈل کے مبینہ مرکزی ملزم ڈپٹی کنٹرولر امتحانات دبیر احمد کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین اینٹی کرپشن نے بتایا ہے کہ کراچی انٹربورڈ میں کرپشن سےمتعلق تحقیقات جاری ہیں جس کے بعد انٹر بورڈ کے دفتر پر چھاپے اور انکوائری کے دوران ڈپٹی کنٹرولر امتحانات دبیراحمد کو گرفتار کرلیا گیا ہے، ملزم پر امتحانی نتائج میں تبدیلی اور ہیر پھیر کرنے کا الزام ہے۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈپٹی کنٹرولر امتحانات دبیر احمد پیسے لے کربڑے پیمانے پر امتحانی نتائج  میں ردو بدل کرنے میں ملوث رہا ہے اس حوالے سے سائینس ، کامرس اور آرٹس گروپ کے فی پرچہ ریٹ مختص کر رکھے تھے جس کے تحت آرٹس گروپ کے فی پرچہ ریٹ سب سے کم جب کہ سائینس گروپ  (پری انجینیئرنگ) کے ریٹ سب سے زیادہ تھے یہ گروہ پرچوں میں کامیبابی دلوانے کے علاوہ نمبروں میں بھی ردوبدل کروا کر اچھے گریڈ بھی دلوادیتا تھا۔

اسی سے متعلق : انٹر بورڈ کراچی پر اینٹی کرپشن کا چھاپہ ، ملازمین نے ہڑتال کردی

 

واضح رہے دس روز قبل اینٹی کرپشن یونٹ کی جانب سے انٹر بورڈ آف کراچی میں کارروائی کی گئی جو 48 گھنٹوں سے زائد وقت تک جاری رہی اس دوران داخلی و خارجی راستوں کو بند کرتے ہوئے بورڈ آفس میں موجود ملازمین کو بھی گھر جانے کی اجازت نہیں دی گئی جس کے بعد بورڈ کے ملازمین نے احتجاج کرتے ہوئے کام جاری رکھنے سے منع کردیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں : کراچی انٹربورڈ میں کرپشن: لاکھوں طلبہ کا مستقبل داؤ پر لگ گیا

جب کہ کنٹرولر امتحانات عمران چشتی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے موقف اپنایا تھا کہ اینٹی کرپشن کے اعلیٰ حکام کی جانب سے چند طالب علموں کے نمبروں میں ردوبدل کرانے کے لیے دباؤ ڈالا گیا تھا، بورڈ کی جانب سے انکار پر اینٹی کرپشن نے بورڈ انتظامیہ کے خلاف انتقامی کارروائی کی گئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top