عائشہ گلا لئی کی قسمت کا فیصلہ 24 اکتوبر کو ہوگا aisha gulali
The news is by your side.

Advertisement

عائشہ گلا لئی کی قسمت کا فیصلہ 24 اکتوبر کو ہوگا

اسلام آباد : الیکشن کمیشن نےعائشہ گلالئی کو ڈی سیٹ کرنے کے لیے تحریک انصاف کے ریفرنس پر فيصلہ چوبيس اکتوبر تک کے لیے محفوظ کرليا ہے.

تفصیلات کے مطابق چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 5 رکنی بنچ نے تحریک انصاف کی جانب سے اپنی منحرف رکن قومی اسمبلی عائشہ گلا لئی کی نااہلی کے لیے دائر کی گئی ریفرنس کی سماعت کی.

دورانِ سماعت چیف الیکشن کمشنرکے استفسار پر پی ٹی آئی کے وکیل سکندر بشیر نے بتايا کہ پارٹی ميں کسی کی معطلی کا طریقہ کار نہیں چنانچہ چیئرمین کسی بھی رکن اسمبلی کومعطل یا بے دخل کرسکتا ہے.

تحریک انصاف کے وکیل نے مزید کہا کہ عائشہ گلالئی نے پارٹی پالیسی سے انحراف کيا ہے لہذا وہ اب تحریک انصاف کی نمائندگی کا حق نہیں رکھتیں اور یہ بھی یاد رہے کہ عائشہ گلالئی خواتین کی مخصوص نشست پر پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر منتخب ہوئی وہ براہ راست منتخب نہیں ہوئی ہیں.


 پی ٹی آئی کوالوداع کہہ رہی ہوں، تحریک انصاف میں خواتین کی عزت نہیں کی جاتی، عائشہ گلالئی


عائشہ گلالئی کے وکیل بیرسٹرمسرور نے الیکشن کمیشن کو شوکاز نوٹس، کوریئرکمپنی کی بکنگ اور ڈلیوری کی تفصیلات پیش کرتے ہوئے بتایا کہ 17 اگست تک جواب مانگنے کا نوٹس 18 اگست کو پوسٹ کیا گیا ہے۔

عائشہ گلا لئی کے وکیل نے مزید کہا کہ زبانی کہنے سے استعفی قبول ہوتا ہے تو پوری تحریک انصاف پارلیمنٹ کا حصہ نہیں رہے گی اس لیے الیکشن کمیشن میری موکل کی رکنیت کو برقرار رکھنے کا فیصلہ دے.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں