site
stats
پاکستان

ڈی جی آئی ایس آئی نے بے نظیر کو جلسے میں‌ جانے سے منع کیا تھا، انکشاف

لاہور: سینئر صحافی صابر شاکر نے انکشاف کیا ہے کہ بے نظیر بھٹو کو قتل سے ایک روز قبل اس وقت کے ڈی جی آئی ایس آئی ندیم تاج نے جلسے میں جانے سے منع کیا تھا اور کہا تھا کہ آپ کی جان کو خطرہ ہے لیکن محترمہ راضی نہ ہوئیں۔

یہ انکشاف انہوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام دی رپورٹر میں کیا، پروگرام میں صحافی سمیع ابراہیم اور عارف حمید بھٹی بھی موجود تھے۔

صابر شاکر نے کہا کہ محترمہ کو کہا گیا تھا کہ آپ کی جان کو خطرہ ہے، لوگ پیچھے لگے ہوئے ہیں، کراچی میں کارساز پر ان پر حملہ بھی ہوچکا تھا لیکن اس کے باوجود کس نے انہیں یہ مشورہ دیا کہ آپ لیاقت باغ جلسے کے بعد گاڑی سے نکلیں اس بات کی تحقیقات ہونی چاہیے کیوں کہ جب تک تحقیقات نہیں ہوجاتیں اس وقت کچھ حتمی کہنا قبل از وقت ہوگا۔

بیان کی ویڈیو دیکھیں:


صابر شاکر نے کہا کہ سعود عزیز اور ایس پی کو سزائیں سنائی گئیں جب کہ 5 افراد کو بری کردیا گیا، اس کیس کے فیصلے میں ابھی تک کئی سوالات باقی ہیں کہ ان 5 افراد کو کس بنیاد پر بری کیا گیا لیکن پرویز مشرف نے جو آج بات کہی ہے اس کی بڑے پیمانے پر تحقیقات ضروری ہے۔

Image

اس وقت کے ڈی جی ٓآئی ایس آئی ندیم تاج کی فائل فوٹو

خیال رہے کہ آج پرویز مشرف نے بیان دیا ہے کہ بے نظیر اور مرتضیٰ بھٹو کے قتل کے پیچھے آصف زرداری کا ہاتھ ہے اور میرا یہ بیان بے نظیر کے بچوں کے لیے ہے۔

ان کے اس بیان کے بعد سیاسی حلقوں میں ہلچل مچ گئی ہے، میڈیا پر ٹاک شوز میں پیپلز پارٹی کے رہنماؤں کی جانب سے پرویز مشرف کے خلاف سخت رد عمل دیا جارہا ہے۔

یہ پڑھیں: بے نظیر اور مرتضی بھٹو کے قتل کے پیچھے زرداری ہیں، مشرف

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top