The news is by your side.

Advertisement

دہشت گردوں کو کس نے بھیجا معلومات مل گئی ہیں، ڈی جی آئی ایس پی آر

پشاور: ترجمان پاک فوج نے کہا ہے کہ چار سدہ حملے کے دہشت گردوں کوکس نےبھیجا پتہ چل گیاہے، دہشت گردوں کےموبائل فون میں افغانستان کی سمیں تھیں.

ان خیالات کا اظہار ڈی جی آئی ایس پی آر عاصم سلیم باجوہ نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی، انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کی فون کالز کو ٹریس کیا جا چکا ہے،ڈیٹا اکھٹا کیا جاچکا ہے اور تحقیقات کے بعد نادرا کے ساتھ مل کر ایک انٹیلی جنس تصویر مرتب کی گئی ہے.

عاصم باجوہ نے کہا کہ یونیورسٹی پر 4 چار دہشت گردوں نے حملہ کیا اور یونیورسٹی میں موجود سیکیورٹی اسٹاف نے مزاحمت کی۔ فوج پہنچی تو چاروں دہشت گرد زندہ تھے۔ ان چاردہشت گردوں کو سیڑھیوں اور چھت پر مارا گیا.

نادرا ملزمان کا مزید ڈیٹا چیک کر رہی ہے۔ دہشت گردوں کے پاس افغانستان کی سمیں تھیں اور ایک دہشت گرد کے مرنے کے بعد بھی اس کے فون پر افغان سم سے کالیں آ رہی تھیں۔

حملہ آور کہاں سے آئے ، کس نے بھیجا کافی حد تک معلومات اکٹھی ہو چکی ہے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا ہم حالت جنگ میں اور آپریشن ضرب عضب کی کامیابیاں سامنے ہیں۔ انٹیلی ایجنس آپریشن پہلے سے زیادہ جاری رہیں گے اور دہشت گردوں کو ان کے مقاصد میں کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

انہوں نے کہا 45 منٹ کے اندر تمام فورسز ایکٹو تھیں اگر حملہ آوروں کو روکا نہ جاتا تو زیادہ نقصان ہو سکتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف پوری قوم متحد ہے، تمام صوبائی وفاقی حکومت اور افواج پاکستان شہریوں کے ساتھ مل کر ان دہشت گردوں کو شکست دیں گے جب کہ معاشرے نے دہشت گردوں کی منفی سوچ کو مسترد کردیا ہے لہٰذا یہ اب گھبراہٹ میں معصوم لوگوں کو اپنے ظلم کا نشانہ بنا رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں