site
stats
اہم ترین

دہشتگردی کیخلاف جنگ میں عالمی برادری نے سپورٹ نہیں کیا، عاصم سلیم باجوہ

برلن : ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ دہشتگردی کیخلاف پاکستان نے بہت کچھ کیا لیکن اس جنگ میں پاکستان کو تنہا چھوڑ دیا گیا ہے، ڈومور کا مطالبہ امتیازی سلوک ہے۔

لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے جرمن نشریاتی ادارے کو انٹرویو میں واضح کیا کہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستان نے سب سے زیادہ اقدامات کئے، شمالی وزیرستان میں بلاتفریق آپریشن کیا گیا ہے تاہم دوسرے ممالک کے الزامات پاکستان کے ساتھ زیادتی ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے شکوہ کیا کہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں عالمی برادری نے سپورٹ نہیں کیا۔

انھوں نے بتایا کہ پہلے فوج نے شمالی وزیرستان اور پھر خیبر ایجنسی میں آپریشن کیا اور اس کے بعد پاکستان میں انٹیلی جنس کی بنیاد پر 18 ہزار آپریشن کیے گئے، جن کے دوران 240 دہشت گرد مارے گئے۔

ترجمان پاک فوج نے دوٹوک مؤقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ ڈرون حملوں پر ہر سطح پر بات ہوئی ہے، پاکستان احتجاج کرتارہا ہے، پاکستان دہشتگردی کے خاتمے کے لئے کردار ادا کرتا آرہا ہے۔

لیفٹیننٹ جنرل عاصم باجوہ کا کہنا تھا کہ بھارت کے ساتھ تعلقات بہتر نہ ہونے کی بنیادی وجہ مسئلہ کشمیر ہے، بھارت کو اگر این ایس جی کی رکنیت دی گئی تو یہ امتیاز ہوگا ۔

طورخم بارڈر پر کشیدگی سے متعلق بات کرتے ہوئے عاصم باجوہ کا کہنا تھا کہ پاک افغان بارڈر پر فائرنگ کا تبادلہ ہوا ہے ۔تاہم افغان حکام سے بات چیت جاری ہے، بارڈر میکنزم کے بغیر سرحد کے دونوں جانب قیام امن ممکن نہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top