The news is by your side.

Advertisement

پاکستانی ڈاکٹرز کا مقبوضہ کشمیر جانے کا اعلان مثبت قدم ہے، ڈی جی آئی ایس پی آر

راولپنڈی: ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ پاکستانی ڈاکٹرز کا مقبوضہ کشمیر جانے کا اعلان مثبت قدم ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے ڈائریکٹر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ کشمیریوں سے یکجہتی کا جذبہ صرف افواج تک محدود نہیں ہے، قومی جذبہ ملکی دفاع کے لیے بہت ضروری ہے۔

ترجمان پاک فوج نے کہا کہ آرمی چیف کہتے ہیں وہ عظیم فوج کے سپہ سالار ہیں، مائیں بچوں کو فوج میں بھیجتی ہی اس لیے ہیں کہ وہ جام شہادت نوش کریں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی کے وائس چانسلر نے بہت اچھا قدم اٹھایا ہے، یوم دفاع کے دن جہاں بھی جس گلی میں ہو شہید کے گھر جائیں گے۔

چھ ستمبر شہدا کی گلی اور محلوں میں ضرور جائیں

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور

آصف غفور نے کہا کہ خوبصورتی کے لحاظ سے پاکستان جیا ملک دنیا میں نہیں ہے، دہشت گردی کے خلاف قوم نے بہت قربانیاں دی ہیں، زندہ قومیں اپنے شہدا کو یاد رکھتی ہیں۔

ترجمان پاک فوج نے کہا کہ 6 ستمبر یوم دفاع سے متعلق تقریب جی ایچ کیو میں ہوگی، مرکزی تقریب صبح ساڑھے 8 بجے ہوگی، سویلین شہیدوں اور زخمیوں کی تعداد فورسز سے زیادہ ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ ہمیں اپنے ادارے پر فخر ہے، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں 81 ہزار سے زائد جانوں کا نذرانہ دیا، میری درخواست ہے کہ شہدا کی گلی اور محلوں میں ضرور جائیں۔

انہوں نے کہا کہ 81 ہزار سے زائد ہیروز غازی بھی ہیں اور شہید بھی، شہید کی فیملی افواج پاکستان کی پہلی ذمہ داری ہے، شہید کی فیملی، ان کے بچوں کی پوری ذمہ داری پاک فوج اٹھاتی ہے۔

ترجمان پاک فوج نے کہا کہ حکومت اپنے وسائل کے مطابق شہدا کے خاندان کا خیال رکھتی ہے، ہمارے لیے بلاتفریق شہید صرف شہید ہے، شہادت کا جذبہ صرف فورسز تک محدود نہیں ہے۔

میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ شہید سپاہی کے خاندان کا شہید افسر کے خاندان سے زیادہ خیال رکھتے ہیں، وزیراعظم نے کہا غیرممالک مفادات کی وجہ سے ہمارے ساتھ نہیں ہیں، لندن ہو یا سری لنکا مقبوضہ کشمیر پر لوگ ہمارے ساتھ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ فوج 72 سال سے کشمیر کے لیے جنگ لڑ رہی ہے، عالمی دنیا نے کشمیر کے معاملے پر زیادہ توجہ نہیں دی، مودی کی وجہ سے کشمیر ایک عالمی مسئلہ بن گیا ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی ار نے کہا کہ ایل او سی فائرنگ میں پاکستان کا زیادہ نقصان ہوتا ہے، بھارتی فوج ایل او سی پر ہماری شہری آبادی کو نشانہ بناتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں