site
stats
پاکستان

مشتاق رئیسانی سے پلی بارگین کرکے 65کروڑ32لاکھ روپے واپس لےلیے، ڈی جی آپریشنز نیب

کوئٹہ : ڈی جی آپریشنز نیب کا کہنا ہے کہ مشتاق رئیسانی سے پلی بارگین کر کے پینسٹھ کروڑ بتیس لاکھ روپے واپس لے لیے، پنجاب میں اس وقت سب سے زیادہ کیسز ہیں، رانا مشہود کے خلاف ابھی تک انکوائری چل رہی ہے۔

ڈی جی آپریشنز نیب ظاہرشاہ نے پریس کانفرنس میں تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ سابق سیکریٹری خزانہ بلوچستان کے گھر سے نکلے سرکاری خزانے کی سرکار کو واپسی کردیئے ہیں، مشتاق رئیسانی نے پینسٹھ کروڑ بتیس لاکھ نقد، اسی کروڑ کی جائیدادیں حوالے کیں اور تین ہزار تین سوگرام سونا بھی سرینڈر کیا جبکہ ملزم نے اپنے ککاﺅنٹ میں موجود 96کروڑ بھی ہمارے حوالے کر دیے ہیں ۔

ظاہرشاہ نے انکشاف کیا کہ کرپشن کیس پر کام کرنے والے نیب حکام کو دھمکیاں بھی دی گئیں۔

انہوں نے بتایا کہ مشتاق رئیسانی کیس میں گیارہ جائیدادیں سامنے آئیں جبکہ کوئٹہ میں 6اورکراچی میں7کروڑ کی جائیدادیں قبضے میں لی گئی ہیں جبکہ اس کے کچھ گھر ہیں جو بہت قیمتی ہیں۔

ڈی جی نیب نے مزید بتایا کہ پنجاب میں اس وقت سب سے زیادہ کیسز ہیں، رانا مشہود کے خلاف ابھی تک انکوائری چل رہی ہے، میٹرو پروجیکٹ کے خلاف تحقیقات مکمل کر لیں۔

ظاہرشاہ کا کہنا تھا پلی بارگین کی درخواست کی منظوری دینا چیئرمین کا کام ہے، پلی بارگین کرنے والے کسی کو منہ دکھانے کے قابل نہیں رہتے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top