سرکریک سے ایران تک آپریشن کی صلاحیت موجود ہے، ڈی جی میری ٹائم pakistan maritime
The news is by your side.

Advertisement

سرکریک سے ایران بارڈر تک آپریشن کی صلاحیت موجود ہے، ڈی جی میری ٹائم

کراچی : مختلف سمندری خطرات سے نمٹنے کے لیے پاکستان میری ٹائم کے بیڑے نے کھلے سمندر میں پیشہ ورانہ صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا، ڈی جی میری ٹائم کا کہنا ہے کہ سرکریک سے ایران بارڈر تک کوئی بھی آپریشن کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سمندر میں بحری قذاقی، تلاش و بچاؤ، انسانی و منشیات کی اسمگلنگ سمیت دیگر خطرات سے نبرد آزما ہونے اور مختلف ممالک کے درمیان سمندری تجربات کے تبادلوں پر مبنی انتہائی اہم ’’انٹرنیشنل ہیڈ آف ایشین کوسٹ گارڈ کانفرنس‘‘ کی پاکستان پہلی مرتبہ میزبانی کے فرائض انجام دے گا۔

کھلے سمندر میں پاکستان میری ٹائم کے بحری بیٹرے کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کے مظاہرے اور فلیٹ ریویو کے موقع پر ڈائریکٹر جنرل پاکستان میری ٹائم سکیورٹی ایجنسی ریئر ایڈمرل جمیل اختر کا کہنا تھا کہ 3 روزہ بین الاقوامی کانفرنس 24 تا 26 اکتوبر اسلاآباد میں منعقد کی جارہی ہے، ایشیائی ممالک کی میری ٹائم سربراہ کانفرنس میں بھارت بھی شریک ہورہا ہے جبکہ بنگلہ دیش، سری لنکا، ملائشیا، جاپان، چین اور تھائی لینڈ سمیت 20 سے زائد ممالک بھی شرکت کررہے ہیں۔

ڈی جی میری ٹائم سیکیورٹی کے مطابق سمندر میں تلاش وبچاؤ، بحری قذاقی، منشیات اور انسانی اسمگلنگ، غیر قانونی ماہی گیری، ماحولیات اورپیشہ ورانہ و تعمیری صلاحیتوں میں اضافے سمیت دیگر اہم موضوعات پر مہمان ممالک کے ساتھ تجربات کا تبادلہ کیا جائے گا۔

جمیل اختر کا کہنا تھا کہ سمندر میں اپنے بحرے بیڑے کے ساتھ مشق نما ریویو کا بنیادی مقصد بیٹرے میں شامل ہونے والے 5 نئے بحری جہاز وں اور پرانے بحری جہاز وں کے درمیان کسی بھی آپریشن کے رسپانس اور کوآرڈی نیشن کو بھی جانچنا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ سرکریک سے ایران بارڈر تک کوئی بھی آپریشن کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتے ہیں۔

رئیر ایڈمرل جمیل اختر کے مطابق مستقبل میں میری ٹائم سیکورٹی ایجنسی نے سی پیک کی اہم ترین ذمہ داری کا بیٹرہ اٹھانا ہے، اسی ذمہ داری کے سلسلے میں جہاں جدید ہیلی کاپٹرز کی شمولیت کو ممکن بنایا جارہا ہے جبکہ 1500 ٹن وزنی بحری جہازوں کولاچی اور ژوب کی تیاری بھی جاری ہے۔

ڈائریکٹر جنرل پاکستان میری ٹائم کا صحافیوں کے ساتھ گروپ

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں