The news is by your side.

Advertisement

ڈی آئی خان دھماکا دہشت گردوں کی بزدلانہ کوشش تھی، شوکت یوسفزئی

پشاور : وزیراطلاعات کے پی شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ ڈی آئی خان دھماکا دہشت گردوں کی بزدلانہ کوشش تھی، دہشت گردوں کے خلاف قوم متحد ہے۔

یہ بات انہوں نے ڈیرہ اسماعیل خان میں ہونے والے دہشت گرد حملے سے متعلق میڈیا کو تفصیلات بتاتے ہوئے کہی۔ شوکت یوسفزئی کا کہنا تھا کہ حملے میں ملوث ملک دشمن عناصر جلد گرفتار ہوں گے۔

حملے کے بعد ڈی آئی خان میں آپریشن جاری ہے، انہوں نے کہا کہ سانحہ میں زخمی ہونے والوں کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے پشاور منتقل کیا گیا ہے، نیشنل ایکشن پلان کے مثبت نتائج سامنے آئے۔

وزیر اطلاعات خیبرپختونخوا کا مزید کہنا تھا جکہ دہشت گرد بزدلانہ اور چھپ کر وار کررہے ہیں، قبائلی اضلاع میں پرامن الیکشن بہتر سیکیورٹی کا نتیجہ ہے، ڈی آئی خان دھماکا دہشت گردوں کی بزدلانہ کو شش تھی، دہشت گردوں کے خلاف قوم متحد ہے۔

مزید پڑھیں : ڈی آئی خان میں اسپتال کے گیٹ پرخودکش دھماکا، 4 افراد جاں بحق

یاد رہے کہ ڈی آئی خان میں کوٹلہ سیداں پولیس چیک پوسٹ پر پہلے دہشت گردوں نے فائرنگ کی جس کے نتیجے میں دو پولیس اہلکار شہید ہوئے۔

شہید پولیس اہلکاروں کی لاشیں جب ڈسٹرکٹ اسپتال لائی گئیں تو اسپتال کے دروازے پر دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں چار افراد جاں بحق جبکہ دس افراد زخمی ہوگئے۔

دھماکے کے فوری بعد سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر تحقیقات کے لیے شواہد اکٹھے کرنا شروع کردیئے۔ دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد کو کمبائنڈ ملٹری اسپتال منتقل کردیا گیا جہاں انہیں طبی امداد دی جا رہی ہے۔ شہید اہلکاروں کی شناخت کانسٹیبل جہانگیر اور کانسٹیبل انعام کے نام سے ہوئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں