The news is by your side.

Advertisement

ڈیزل کی قلت: پی ایس او نے انتظام کر لیا

پاکستان اسٹیٹ آئل ملک بھر میں اپنے ریٹیل آﺅٹ لیٹس پر فیول کی بلا تعطل سپلائی کو یقینی بناتے ہوئے قوم کی فیول کی ضروریات کو ہر حال میں پورا کرنے کےلئے پرعزم ہے۔

فصلوں کی کٹائی کے سیزن اور دیگر کمپنیوں کی طرف سے مصنوعات کی محدود دستیابی / درآمد کی وجہ سے ڈیزل کی بڑھتی ہوئی طلب کے تناظر میں پی ایس او نے مارچ سے مئی 2022تک ہائی سپیڈ ڈیزل ( ایچ ایس ڈی ) کے پانچ اضافی کارگوز کا بندوبست کیا ہے۔

کارگوز پی ایس او کی طرف سے معمول کے مارکیٹ شیئر کے مطابق مجوزہ 11 کارگوز کے علاوہ ہیں جس کا عزم پی ایس او نے آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی ( اوگرا) کی زیر صدارت پروڈکٹ ریویو میٹنگ کے دوران بھی کیا۔ ایپریل2022 میں پی ایس او نے تقریبا ً120 ملین لیٹر یعنی 100,000 ٹن اضافی ڈیزل فروخت کیا جو 2 درآمدی کارگوز کے برابر ہے۔ اپریل 2021 تک کمپنی کا 49.7فیصد کے ماہانہ مارکیٹ شیئر کے مقابلےمیں مارکیٹ شیئر 57.4 فیصد رہا۔

فیول کی بڑھتی ہوئی طلب کو پورا کرنے کےلئے ہمارے پاس سپلائی چین میں فیول کا وافر سٹاک موجود ہے ۔ ہمارے سارے درآمدی کارگو پلان کے مطابق پاکستان پہنچ رہے ہیں ۔ پی ایس او سپلائی چین پر اچانک دباﺅ کے باوجود ہماری ٹیمیں قوم کی فیول کی ضروریات کو پورا کرنے کےلئے 24/7 گھنٹے کام کررہی ہیں۔

اوگرا دیگر آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کی طرف سے فیول مصنوعات کی دستیابی سے متعلق مجموعی صورتحال کی نگرانی کررہا ہے تاکہ ملک کے سپلائی چین کو برقرار رکھا جاسکے۔ پی ایس او قوم کی خدمت کرنے کےلئے مکمل طور پر پرعزم ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں