The news is by your side.

Advertisement

متحدہ عرب امارات، ڈیجیٹل شناختی کارڈ‌ کیسے بنوایا جاسکتا ہے؟ جانیے

متحدہ عرب امارات کی حکومت نے  محفوظ ڈیجیٹل شناختی کارڈ متعارف کرانے کا اعلان کردیا، جس کے تحت اب شہری گھر بیٹھے چہرے  کی شناخت کرا کے خود کو رجسٹرڈ کراسکتے ہیں۔

عرب میڈیا رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات کی حکومت نے پہلا محفوظ ڈیجیٹل شناختی کارڈ  متعارف کرانے کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ اب متحدہ عرب امارات شہریوں کو رجسٹرڈ کرنے کے لیے چہرے کی بائیو میٹرک شناخت استعمال کرے گا۔

اس منصوبے کو ’متحدہ عرب امارات پاس ایپ‘ کا نام دیا گیا ہے، اس پروگرام کی مدد سےے شہریوں کو اپنے موبائل سے ہی شناختی کارڈ بنوانے یا ان کی توثیق  کرانے کی سہولت ہوگی۔

شہری اس سہولت کے ذریعے ڈیجیٹل دستخط کرسکیں گے جبکہ اس پروگرام کے بعد کاغذات کی لین دین ختم ہوجائے گی جس کا متحدہ عرب امارات کی حکومت نے ہدف مقرر کیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق فیس آئی ڈی جیسی اسمارٹ ٹیکنالوجی کو حکومت مختلف سرکاری و نجی شعبوں میں استعمال کرے گی تاکہ کم وقت میں بہتر سے بہتر کام ہوسکے۔

اماراتی حکومت کے چیف آف گورنمنٹ سروسز محمد بن طلحہٰ کا کہنا تھا کہ ’جدید تصّورات، آلا اور فعال خدمات کو اپنا کر معاشرے کے تمام طبقات کی زندگی کو آسان بنایا جائے گا‘۔

انہوں نے بتایا کہ ڈیجیٹل شناختی کارڈ بنوانے والے شہری کا ’متحدہ امارات پاس ایپ‘ پر پانچ منٹ سے بھی کم وقت میں تصدیق شدہ اکاؤنٹ بن جائے گا جبکہ سرکاری اندراج کے لیے بہت زیادہ بیس منٹ کا وقت لگے گا، اس کے بعد اُسے علیحدہ شناختی کارڈ رکھنے کی ضرورت نہیں ‌ہوگی‘۔

Comments

یہ بھی پڑھیں