دلیپ کمار آج اپنی 93 ویں سالگرہ منارہے ہیں -
The news is by your side.

Advertisement

دلیپ کمار آج اپنی 93 ویں سالگرہ منارہے ہیں

ممبئی : برصغیر کے لیجنڈری اداکار دلیپ کمار آج اپنی 93ویں سالگرہ منارہے ہیں۔ دلیپ کمار نے ہرقسم کے کردارانتہائی مہارت اورخوبصورتی سے نبھائے، لیکن مکالموں کی مخصوص لہجے میں ادائیگی کے سبب انہیں کنگ آف ٹریجڈی اور شہنشاہ جذبات کے اعزازسے نوازاگیا۔

برصغیر کے عظیم ترین اداکار ہوسف خان المعروف دلیپ کمار اپنی زندگی کی تیرانوے بہاریں دیکھ چکے ہیں، یوسف خان عرف دلیپ کمار پشاور کے علاقے قصہ خوانی میں 11 دسمبر 1922 کو پیدا ہوئے۔

ان کے والد لالہ غلام سرور پھلوں کے تاجر تھے،جب یوسف صرف چھ سال کے تھے کہ ان کے والد پورے خاندان کو لے کر ممبئی منتقل ہو گئے۔

بعد ازاں 1943 میں دلیپ کمار کی ملاقات بمبئی ٹاکیز کے مالکان دیویکا رانی اور ان کے شوہر ہمانشو رانی سے ہوئی جنھوں نے انہیں اپنی فلم کے مرکزی کردار کے لئے کاسٹ کرلیا۔ یوسف خان عرف دلیپ کمار نے 1944 میں فلم “جواربھاٹا” میں مرکزی کردار ادا کیا جو ان کا بالی ووڈ میں ڈیبیو ثابت ہوا اور تب ہی سے یوسف خان کا نام دلیپ کماربن گیا۔

ایک اتفاقی ملاقات نے یوسف کی زندگی بدل دی لیکن اس ملاقات کے ساتھ ہی فلم کی دنیا میں اداکاری کا انداز بھی بدل گیا۔ یوسف نے تھیٹر کے انداز سے اداکاری کرنے کے بجائے عام زندگی میں بات چیت کیلیے اپنائے جانے والے انداز کو ترجیح دی اور جس کی بعد میں دوسرے اداکاروں نے نقل شروع کر دی۔

رومانوی کردار ہو یا کامیڈی، دلیپ کمار نے جس کردار کو بھی اپنایا اسے امر کر دیا۔ ہندوستانی حکومت نے شاندار اور بے مثال اداکاری کا اعتراف کرتے ہوئے انہیں 1995 میں ہندوستان کے سب سے بڑے فلمی ایوارڈ “دادا صاحب پھالکے ایوارڈ” سے نوازا۔

 حکومت پاکستان نے بھی انہیں سب سے بڑے سول اعزاز سے نوازا تھا، وہ مرار جی دیسائی کے بعد یہ اعزاز حاصل کرنے والے دوسرے ہندوستانی ہیں۔ جبکہ انہوں نے اپنی شانداراداکاری پر دیگر بے شماربھی ایوارڈز بھی جیتے۔

ایک اطلاع کے مطابق دلیپ کمار کا کہنا ہے کہ وہ چنئی کے سیلاب زدگان کی وجہ سے بے حد افسردہ ہیں جس کی وجہ سے اس سال وہ اپنی سالگرہ کے موقع پر کسی قسم کی تقریب کا اہتمام نہیں کریں گے۔

ان کی طرف سے گزشتہ روز ٹوئٹر پر چنئی سیلا ب زدگان کیلئے نیک تمناؤں کا اظہار کیا گیا۔اداکار کا کہنا تھا کہ ان کی اہلیہ اداکارہ سائرہ بانو بھی انکی سالگرہ منانے کے حق میں نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا ان کی اہلیہ اس خوف میں مبتلا ہیں اگر میں نے اپنی 93ویں سالگرہ منائی تو میں نظر بد کا شکار ہو کر بیمار پڑ جاؤں گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں