The news is by your side.

Advertisement

سندھ میں براہ راست بھرتی کیے گئے اسسٹنٹ کمشنرز لازمی امتحان میں فیل

حیدرآباد: سندھ میں براہ راست بھرتی کیے گئے اسسٹنٹ کمشنرز لازمی امتحان میں فیل ہوگئے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق عدالتی احکامات کے بعد سندھ پبلک سروس کمیشن کی جانب سے 18 اسسٹنٹ کمشنرز کا امتحان لیا گیا تھا جس میں تمام 18 اسسٹنٹ کمشنرز فیل ہوگئے۔

سندھ پبلک سروس کمیشن حکام نے چیف سیکریٹری سندھ کو تمام امیدواروں کے فیل ہونے سے متعلق آگاہ کردیا۔

واضح رہے کہ گریڈ 18 میں ترقی کے لیے سندھ پبلک سروس کمیشن کا امتحان پاس کرنا لازمی ہوتا ہے۔

ذرائع کے مطابق ماضی میں پیپلزپارٹی سمیت دیگر جماعتوں کے وزرا اعلیٰ نے کمیشن کے امتحان کو نظر انداز کرکے متعلقہ 18 اسسٹنٹ کمشنرز کو بھرتی کیا تھا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل ایم کیو ایم رہنما خواجہ اظہار الحسن کا کہنا تھا کہ سندھ پبلک سروس کمیشن شہری دشمن ادارہ ہے، سابق آئی جی سندھ بھرتی کھول کر گئے اس پر عملدرآمد کیوں روک دیا گیا، ہماری بھرتیاں روک کر دیہی علاقوں سے لا کر لوگوں کو بھرتی کیا جارہا ہے، ہم سندھ حکومت کی بنائی گئی کمیٹی کو مسترد کرتے ہیں۔

خواجہ اظہار الحسن کا کہنا تھا کہ نیب سے مطالبہ کرتے ہیں کہ جعلی ڈومیسائل پر تحقیقات کرے، جعلی ڈومیسائل بنانے والے افسران کے خلاف کارروائی کی جائے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں