The news is by your side.

Advertisement

وفاقی کابینہ میں شمولیت پر پی پی میں اختلاف رائے

وفاق میں بننے والی متحدہ اپوزیشن کی نئی حکومت کی کابینہ میں شمولیت کے معاملے پر پاکستان پیپلز پارٹی میں اختلاف رائے پیدا ہوگیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق اسلام آباد میں بننے والی نئی حکومت کی کابینہ میں شمولیت کے معاملے پر پیپلز پارٹی میں متضاد آرا سامنے آئی ہے۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ پی پی کے زیادہ تر اراکین کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کو نئی کابینہ کا حصہ نہیں بننا چاہیے اور بغیر وزارتوں کے ہی وفاقی حکومت کی حمایت کی جائے۔

جب کہ بعض رہنماؤں کی رائے اس کے خلاف ہے اور وہ پی پی کے وفاقی کابینہ میں شمولیت کے حامی ہیں اور اپنے موقف کی حمایت میں کہنا ہے کہ سیاسی استحکام کیلیے پی پی کو وفاقی کابینہ میں شامل ہونا چاہیے انہیں خدشہ ہے کہ اگر پی پی نے کابینہ میں شمولیت اختیار نہ کی تو حکومت 2 ماہ بھی نہیں چل سکے گی۔

ذرائع نے بتایا کہ سابق صدر آصف علی زرداری اور پی پی پی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے متضاد آرا پر مشاورت شروع کردی ہے اور آئندہ چند روزمیں پیپلز پارٹی کی وفاقی کابینہ میں شمولیت پر فیصلہ کیا جائیگا۔

ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ حکومت کے قیام کے بعد مسلم لیگ ن کی جانب سے پاکستان پیپلز پارٹی کو اسپیکر شپ سمیت وزارت خارجہ کی پیشکش کی جائیگی۔

ذرائع کے مطابق پی پی پی نے اسپیکر شپ کیلیے نوید قمر اور خورشید شاہ کے ناموں پر غور جب کہ وزارت خارجہ کیلیے شیری رحمٰن کے نام پر بھی غور جاری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں