The news is by your side.

Advertisement

باہمت سعودی خاتون شاہی خاندان کے لیے مثال بن گئیں

ریاض: سعودی عرب میں غربت کا شکار خاتون نے اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوالیا، صرف 5 ریال سے کاروبار شروع کرنے والی خاتون کے آج شاہی خاندان میں چرچے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سعودی طالبہ نورہ الشمری نے اپنی محنت اور لگن سے انگریزی ادب میں گریجوئیشین کیا، تاہم مالی مشکلات اور گھریلو حالت کے باعث وہ اپنی تعلیم جاری نہ رہ سکی۔ اور اس طرح تعلیم کے حصول کا سلسلہ منقطع ہوگیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق نورہ الشمری کو کڑھائی اور بنائی کے کام میں خصوصی ملکہ حاصل تھا، اس ہنر کے باعث انہوں نے مختصر وقت میں شاہی خاندان سمیت معاشرے میں وہ مقام بنایا جو لوگ برسوں کی محنت سے بناتے ہیں۔

سعودی طالبہ نے مقامی میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ان کے پاس یہ ہنر ان کی ماں سے منتقل ہوا۔

ان کا کہنا تھا کہ میں نے صرف 5 ریال سے ایک ٹوپی کی بنائی کی، اب مسئلہ یہ تھا کہ اسے فروخت کیسے کیا جائے، لیکن بعد میں میرا یہ مسئلہ ہی حل ہوگیا، کیوں نے میری ہم جماعت طلبہ نے میرے ہاتھ کی بنی ٹوپی 20 ریال میں خرید لی۔

اس طرح میرے محنت کا پہلا صلہ ملا اور پھر کاروبار آگے بڑھا۔ اب شاہی خاندان کے لوگ میرے ہاتھ کی بنی ہوئی اشیاء خریدتے ہیں اور مہمانوں میں بطور تحائف کا تبادلہ بھی کرتے ہیں، جو میرے لیے کسی کامیابی سے کم نہیں ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں