The news is by your side.

تحلیل ہونے والی خیبر پختونخواہ اسمبلی کی سوا 4 سالہ کارکردگی سامنے آگئی

پشاور : تحلیل ہونے والی خیبر پختونخواہ اسمبلی نے سوا 4 سال میں مجموعی طورپر211 بل پیش اور 177 منظور کیے جبکہ 188ایکٹس کی منظوری بھی دی۔

تفصیلات کے مطابق تحلیل ہونے والی خیبر پختونخواہ اسمبلی کی سوا 4 سالہ کارکردگی سامنے آگئی ، سمبلی کا پہلا اجلاس 13 اگست2018 کو اور آخری اجلاس18 جولائی 2022 کو طلب کیا گیا۔

خیبر پختونخواہ اسمبلی کاآخری اجلاس 16 دسمبر 2022 تک تقریباً 5 ماہ جاری رہا، کے پی اسمبلی نے اتنی مدت کے دوران 23 سیشنز اور 249 اجلاس منعقد کیے۔

کےپی اسمبلی نے مجموعی طورپر211بل پیش،177منظورکیے اور 188ایکٹس کی منظوری بھی دی جبکہ مختلف محکموں کے حوالے سے 108 سوالات بھی نمٹائے۔

خیبر پختونخواہ اسمبلی نے 244 قرارداوں کی منظوری بھی دی ، اسمبلی اراکین نے سرکاری اہلکاروں کے خلاف 66 استحقاق کی تحاریک بھی پیش کیں۔

وزیر اعلٰی خیبر پختونخوامحمودخان صرف 9 دن اسمبلی اجلاس میں شریک ہوئے ، صوبائی وزراکامران بنگش،شوکت یوسفزئی،تیمورسلیم جھگڑا سب سےمتحرک وزرا رہے۔

اپوزیشن کی جانب سے نگہت اورکزئی قانون سازی سے متعلق متحریک ترین رکن رہیں جبکہ اے این پی کے پارلیمانی لیڈرسردارحسین بابک بھی اپوزیشن کے متحرک رکن رہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں