site
stats
پاکستان

ایوب میڈیکل کمپلیکس میں ڈاکٹرز کی ہڑتال، 40 مریض دم توڑ گئے

ایبٹ آباد: صوبہ خیبر پختونخواہ کے شہر ایبٹ آباد میں واقع ایوب میڈیکل کمپلیکس میں مبینہ کرپشن اور غیر قانونی بھرتیوں کے خلاف ڈاکٹروں کی ہڑتال پانچویں روز میں داخل ہوگئی۔ ہڑتال کے باعث 4 روز کے دوران 40 اموات رپورٹ ہوئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ایبٹ آباد کے ایوب میڈیکل کمپلیکس کی انتظامیہ کی مبینہ کرپشن اور غیر قانونی بھرتیوں کے خلاف ڈاکٹروں کی ہڑتال گزشتہ 5 روز سے جاری ہے۔

ڈاکٹرز نے او پی ڈیز، وارڈز اور آپریشن تھیٹرز کا مکمل بائیکاٹ کر دیا۔ ڈاکٹروں کی ہڑتال میں پروفیسرز, ایسوسی ایٹ اور اسسٹنٹ پروفیسرز بھی شریک ہوگئے ہیں۔

ڈاکٹروں نے حکومت سے چیئرمین بورڈ آف گورنرز جاوید پنی، سیکریٹری بورڈ میجر (ر) صدیق، اسپتال ڈائریکٹر بریگیڈئر (ر) اجمل اور کالج ڈین ڈاکٹر عزیز النسا عباسی کو فوری طور پر عہدوں سے ہٹانے کا مطالبہ کر دیا۔

ہڑتالی ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ مطالبات کی منظوری تک احتجاج ختم نہیں ہوگا۔

ڈاکٹروں نے احتجاج کے بعد ایوب میڈیکل کالج بھی بند کروا دیا اور کلاسز اور لیبارٹری کو تالے لگا دیے گئے۔

مسیحاؤں اور انتظامیہ کے درمیان اس جنگ نے بے شمار مریضوں کی زندگی کا خاتمہ کردیا۔

ڈاکٹرز کی عدم موجودگی اور علاج نہ ہونے کے سبب اب تک 40 مریض تڑپ تڑپ کر دم توڑ چکے ہیں۔

تاحال کسی حکومتی عہدیدار کی جانب سے صورتحال کا نوٹس نہیں لیا گیا۔


Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top