The news is by your side.

Advertisement

رشید گوڈیل کی حالت خطرے سے باہر ہے، ترجمانِ اسپتال

کراچی : ایم کیو ایم کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی رشید گوڈیل کی حالت اب خطرے سے باہر ہے تاہم آئی سی یو سے وارڈ میں شفٹ کرنے کا فیصلہ آئندہ ایک دو روز میں کیا جائے گا۔

ترجمانِ لیاقت نیشنل اسپتال انجم رضوی  کے مطابق ڈاکٹر نے مشاورتی اجلاس کرکے ایم کیو ایم کے رہنماء اور رکن قومی اسمبلی رشید گوڈیل کی زندگی کو خطرے سے باہر قرار دیا ہے، انھوں نے بتایا کہ کوئی دوا استعمال نہیں کی گئی، رشید گوڈیل خود سوئے، سپس میں پانی اور چائے دی ہے۔

انجم رضوی کا کہنا ہے کہ رات بھر ٹیسٹ کیے ہیں، صبح مزید ٹیسٹ کئے جائیں ہیں جبکہ رزلٹ کے بعد شفٹ کرنے کی صحیح وقت اور تاریخ بتائیں گے، ڈاکٹروں کا پینل رشید گوڈیل کو وارڈ میں شفٹ کرنے کا فیصلہ ایک سے دو دن میں کرے گا۔

ترجمانِ لیاقت نیشنل اسپتال انجم رضوی کے مطابق رشید گوڈیل کو بٹھا کر ہلکی غذا دینے آغاز کردیا گیا ہے جبکہ تمام اعضاء صحیح طرح کام کر رہے ہیں ، بلڈ پریشر نارمل ہے۔

دوسری جانب گزشتہ روز ڈی آئی جی ایسٹ منیر شیخ نے رشید گوڈیل سے اسپتال میں ملاقات کی، ملاقات کے بعد منیر شیخ کا کہنا تھا کہ رشید گوڈیل کی صحت زیادہ بات چیت کے لائق نہیں، گاڑی میں موجود افراد کی تعداد پوچھنے پر رشید گوڈیل نے جواب دیا کہ گاڑی میں تین افراد تھے۔

ان کا کہنا تھاکہ رشید گوڈیل کی حالت فی الحال پولیس کو بیان دینے کے قابل نہیں ہے۔

ایم کیو ایم کے رہنماء رشید گوڈیل کے اہلخانہ نے وزیرِ اعلیٰ سندھ اور وفاقی حکومت سے درخواست کی ہے کہ جس میں اپیل کی گئی ہے کہ سیکیورٹی اور نہگداشت کے لئے رشید گوڈیل کو امریکہ بھجوانے کے انتظامات کئے جائیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز ایم کیو ایم کے رہنماء عبد الرشید گوڈیل اپنی گاڑی میں نیو ٹاؤن سے گزر رہے تھے کہ چار موٹر سائیکلوں پر سوار نو حملہ آوروں نے شناخت کے بعد گولیاں برسا دیں، گولیاں لگنے سے عبدالرشید گوڈیل کا ڈرائیور جاں بحق ہوگیا۔ رشید گوڈیل کے جبڑے ،سینے ، اور گردن میں گولیاں لگیں، انہیں فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا،عبد الرشید گوڈیل کے ساتھ ان کی اہلیہ اور بیٹا بھی تھے ،جو محفوظ رہے۔

واقعہ کی سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں، کرائم انوسٹی گیشن کا کہنا ہے کہ فائرنگ نائن ایم ایم پسٹل سےکی گئی، ساٹ فرانزک رپورٹ کے مطابق گولیوں کے آٹھ خول کی جانچ سے پتہ چلا ہے کہ ایسی گولیاں پہلے استعمال نہیں کی گئیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں