The news is by your side.

Advertisement

ملتان : ڈاکٹروں کا احتجاج چودہویں روز بھی جاری، مریض اور لواحقین رل گئے

ملتان / پشاور : ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف پنجاب کے ڈاکٹروں کا احتجاج جاری ہے، گرینڈ ہیلتھ الائنس کی ہڑتال چودہویں روز بھی جاری رہی۔ ڈاکٹروں نے آج بروز جمعرات کو سڑکوں پر آنے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق جنوبی پنجاب ملتان کے سب سے بڑے نشتر ہسپتال میں ڈاکٹروں اور پیرامیڈیکل اسٹاف کی جانب سے ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف چودھویں روز بھی ہڑتال جاری رہی۔

علاج معالجہ کے لئے آنے والے مریضوں کی آنکھیں نم رہیں۔ خیبرپختونخوا میں بھی ہڑتال کو ایک مہینہ ہونے کو ہے اور معاملات تاحال طے نہ ہوسکے، معالجوں اور حکومتوں کی لڑائی کا خمیازہ مریضوں کو بھگتنا پڑ رہا ہے۔

عوام کے لیے بنےاسپتالوں میں علاج نہیں مل رہا ایم ٹی آئی ایکٹ کیخلاف پنجاب کےڈاکٹروں کی ہڑتال جاری ہے، انڈور سروس بند کرنے کی دھمکی اور سڑکوں پرآنے کا اعلان کردیا۔

خیبرپختونخوا کے سرکاری اسپتالوں میں بھی کام بند ہے ڈاکٹرحکومت لڑائی کا خمیازہ غریب عوام بھگت رہے ہیں، واضح رہے کہ نشتر ہسپتال سمیت دیگر سرکاری ہسپتالوں میں گریڈ الائنس کے زیراہتمام ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل اسٹاف کی جانب سے ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف چودھویں روز بھی آوٹ ڈور، لیبارٹری، آپریشن تھیٹر اور ریڈیالوجی میں ہڑتال جاری رہی۔

آنکھوں میں آنسو لیے لواحقین مریضوں کے لیئے معالج کے متلاشی ہیں، چودہ روز سے مسلسل ہسپتالوں کے چکر کاٹنے والے پریشان حال مریض کہتے ہیں کہ حکومت ڈاکٹروں کی ہڑتال ختم کروانے کے لیے اقدامات کرے۔

دور دراز علاقوں اور دوسرے صوبوں سے علاج معالجہ کے لیے آنے والے میسحاوں کی ہڑتال پر ذہنی و جسمانی اذیت کا شکار ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں