The news is by your side.

Advertisement

چڑیا گھر میں جانوروں کی ذہنی صحت پر کام کرنے والے ڈاکٹرز

جانوروں کا خیال رکھنا، ان کی غذا کا خیال رکھنا اور ان سے نرمی سے پیش آنا معمول کی بات ہے لیکن کیا آپ نے کبھی سوچا ہے کہ جانور ذہنی امراض کا شکار بھی ہوسکتے ہیں اور انہیں اس کے علاج کی بھی ضرورت پڑسکتی ہے؟

ممبئی کے چڑیا گھر میں 3 ڈاکٹرز جانوروں کی ذہنی صحت پر کام کر کر رہے ہیں۔

ان ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ قید میں رکھے گئے جانور حد سے زیادہ ذہنی دباؤ کا شکار ہوتے ہیں، اور یہ ان کے لیے جان لیوا بھی ثابت ہوسکتا ہے۔

یہ ڈاکٹرز باقاعدگی سے چڑیا گھر کے جانوروں کا چیک اپ کرتے ہیں اور کسی بھی جانور کو تکلیف میں پاتے ہیں تو فوری طور پر اس کا علاج کرتے ہیں۔

ڈاکٹرز کی ہدایت پر پنجروں کے باہر بورڈ بھی آویزاں کیے گئے ہیں جن میں چڑیا گھر آنے والے افراد کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ جانوروں کو تنگ کرنے یا انہیں کچھ کھلانے سے پرہیز کریں۔

جانوروں کے لیے روزانہ کی بنیاد پر تازہ کھانا، سبزیاں اور پھل منگوایا جاتا ہے۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ قید میں رہنے والے جانور عام جانور کی بہ نسبت زیادہ ذہنی دباؤ کا شکار ہوتے ہیں ایسے میں انہیں مزید پریشان کرنا ان کی جان سے کھیلنے کے مترادف ہوگا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں