ڈالرکی قیمت آج بھی 16 پیسے کا اضافہ
The news is by your side.

Advertisement

ڈالرکی قیمت آج بھی 16 پیسے کا اضافہ

کراچی : انٹربینک مارکیٹ میں ٹریڈنگ کے آغاز پر روپے کی قدر میں اتار چڑھاؤ دیکھا گیا، ڈالرکی قیمت پھرسولہ پیسے بڑھ گئی، جس کے بعد امریکی کرنسی 133.80 پر پہنچی گئی۔

تفصیلات کے مطابق انٹربینک مارکیٹ میں روپے کی قدر میں اتار چڑھاؤ کا سلسلہ جاری ہے ،ٹریڈنگ کے آغاز میں ڈالر کی قدر میں 38 پیسے کمی ریکارڈ کی گئی لیکن بعد میں ڈالرکی قیمت پھرسولہ پیسےبڑھ گئی۔

فاریکس ڈیلرز کے مطابق انٹربینک میں ڈالر ایک سو تینتیس روپے اسی پیسے کا ہوگیا۔

دوسری جانب فاریکس ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر ایک روپے سستا ہوا، جس کے بعد اوپن مارکیٹ میں ڈالر 135روپے 50پیسے کا ہوگیا۔

گزشتہ روز روپےکی قدرمیں ریکارڈ کمی دیکھی گئی،امریکی کرنسی کی قیمت ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پرپہنچ گئی تھی اور صرف ایک دن میں ڈالرکی قدرمیں آٹھ روپے بڑھی تھی۔

اوپن مارکیٹ میں بھی ڈالر ایک سو چھتیس روپے پچاس پیسے پربندہوا جبکہ انٹر بینک میں ڈالر نو روپے مہنگا ہو کر ایک سوتینتیس روپے پچاس پیسے پر بند ہوا۔

مزید پڑھیں : انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر بلند ترین سطح پرپہنچ گیا

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں بھی منفی رجحان رہا اور کاروبار کے دوران ہنڈرڈانڈیکس میں دوسوسترپوائنٹس کی کمی دیکھنے میں آئی۔۔ انڈیکس اڑتیس ہزار دو سوپچاس کی سطح سےنیچے آگیا۔

وزیراطلاعات فوادچوہدری کا کہنا تھا کہ معاشی اعتبارسےسخت فیصلے کرلیے، کڑوا گھونٹ بھرلیا، اب یہاں سے پاکستان کا تگڑا سفرشروع ہوگا۔

معاشی ماہرین کےمطابق روپےکی قدرمیں کمی کی وجہ آئی ایم ایف پروگرام میں جانا ہے، مالیاتی فنڈ نے روپےکی قدر میں نمایاں کمی کی شرط عائدکی ہے۔

اسٹیٹ بینک کا کہنا تھا کہ ڈالر کے مقابلے میں روپے کی بے قدری کی بڑی وجہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ہے، طلب اور رسد میں فرق کی وجہ سے ڈالر مہنگا ہوا، عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں اضافے سے زرمبادلہ مارکیٹ دباؤ میں ہے، ناخوشگوار اتار چڑھاؤ پر اسٹیٹ بینک مداخلت کے لیے تیار ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں