The news is by your side.

Advertisement

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنا مذاق بننے پر ناراض، کانفرنس چھوڑ کر چلے گئے

لندن : امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ اپنا مذاق بننے پر ناراض ہوگئے اور اطالوی وزیراعظم کے ساتھ کانفرنس منسوخ کردی، ٹرمپ نے کینیڈین وزیراعظم کو بہروپیا قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق بکنگھم پیلس میں ڈونلڈ ٹرمپ، برطانوی ڈچ اور کینیڈین وزرائے اعظم ساتھ موجود تھے۔ قریب ہی شہزادی اینی بھی موجود تھیں۔

اس موقع پر کینیڈین وزیراعظم جسٹس ٹروڈو کی عالمی رہنماؤں کے ساتھ ٹرمپ کے مبینہ مذاق اڑانے کی ویڈیو وائرل ہونے پر ٹرمپ نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے اطالوی وزیراعظم کے ساتھ کانفرنس منسوخ کردی اور نیٹو سمٹ جلدی چھوڑ کر واپس امریکہ چلے گئے۔

سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر وائرل ہونے والی کینیڈا کے سرکاری چینل کی ایک ویڈیو جس میں جسٹن ٹروڈو، برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن، فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکرون، ہالینڈ کے وزیراعظم مارک رُٹے اور ملکہ الزبتھ کی بیٹی شہزادی این سے بات چیت کر رہے ہیں۔

بورس جانسن نے ایمانوئیل میکرون سے پوچھا کہ “کیا اسی وجہ سے آپ کو دیر ہوئی؟ جس پر جسٹن ٹروڈو نے کہا انہیں اس لیے دیر ہوئی کیونکہ 40 منٹ کی پریس کانفرنس ان کی ترجیح تھی۔

سرگوشیوں کی یہ وڈیو وائرل ہوکر ٹرمپ تک پہنچی جس پر وہ نیٹو اجلاس بھی ادھورا چھوڑ کر امریکا لوٹ گئے۔

مذاق والی ویڈیو پر سوال ہوا تو ٹرمپ نے کینیڈین وزیراعظم کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے بہروپیا قرار دیا، کینیڈین وزیراعظم ٹروڈو نے پریس کانفرنس میں کہا کہ ٹرمپ کے ساتھ اچھا تعلق ہے۔

جبکہ ویڈیو لیک ہونے پر فرانس کے صدر میکرون ناراض ہو گئے اور برطانیہ کے وزیراعظم بورس جانسن انجان بن گئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں