The news is by your side.

Advertisement

شمالی کوریا معاملہ، صدر ٹرمپ کا تقریباً مسئلہ حل کرنے کا دعویٰ

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے شمالی کوریا سے متعلق جوہری ہتھیاروں کا جو معاملہ تھا اسے تقریباً حل کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے رواں سال 12 جون کو شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان سے سنگاپور میں اہم ملاقات کی تھی جس کے بعد یہ اہم پیش رفت سامنے آئی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ صدر ٹرمپ نے دعویٰ کیا ہے کہ سنگاپور میں ان کی شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ اُن کے ساتھ ملاقات میں شمالی کوریا کے مسئلے کا زیادہ تر حصہ حل ہو چکا ہے۔


اب شمالی کوریا سے کسی قسم کا جوہری خطرہ نہیں، ڈونلڈ‌ ٹرمپ


وائٹ ہاؤس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے امریکی صدر کا کہنا تھا کہ شمالی کوریا اپنے جوہری ہتھیار ختم کردے گا، اس پر شمالی کوریا کام کر رہا ہے جلد اہم خبر سامنے آئے گی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اس سے قبل امریکی تاریخ میں کبھی شمالی کوریا سے اچھے تعلقات نہیں رہے، لیکن اب میں نے ایسا کر دکھایا ہے، جلد نتائج قوم کے سامنے آجائیں گے۔


ٹرمپ کا شمالی کوریا کے جنرل کو انوکھا سلیوٹ


خیال رہے کہ دو دن قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ گذشتہ دنوں شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان کے ساتھ ملاقات نے دنیا کو جوہری آفت سے بچانے میں اہم کردار ادا کیا، اب شمالی کوریا سے کسی قسم کا جوہری خطرہ نہیں ہے۔

واضح‌ رہے کہ ٹرمپ نے 12 جون کو سنگاپور کے جزیرے سینتوزا میں شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان سے تاریخی ملاقات کی تھی اس موقع پر دونوں‌ ملکوں‌ کے درمیان اہم دستاویز پر دستخط بھی کئے گئے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں